پیر پنچال کے متعدد علاقوں میں موسلا دھار بارشیں | ندی نالوں میں طوفانی صورتحال پیدا ہوئی ،سڑکیں بھی زیر آب آگئی

پونچھ +راجوری //سرحدی ضلع پونچھ اور راجوری کے متعدد علاقوں میں گزشتہ روز ہوئی طوفانی بارش کی وجہ سے عام زندگی مفلوج ہو کررہ گئی ۔گزشتہ روز بعد دوپہر اچانک ہوئی بارش کی وجہ سے کسانوں کی فصلیں و زمینیں بھی متاثر ہوئی ہیں جبکہ دونوں سرحدی اضلاع میں کئی ایک رابطہ سڑکیں بھی زیر آب آگئی ۔مینڈھر سب ڈویژن کے متعدد دیہات میں ہوئی بارش کی وجہ سے ندی نالوں میں طوفانی صورتحال پیدا ہو گئی جبکہ کئی ایک مویشی بھی نالوں کی زد میں آگئے تاہم مقامی لوگوں کی کارروائی کے دوران مویشیوں کو بچالیا گیا لیکن مینڈھر نالے پر پید ا ہوئی طوفانی صورتحال کے دوراین ایک بھینس دریا میں بہہ گئی ۔اس کے علاوہ کسانوں کی فصلیں و زمینیں بھی طوفانی بارش کی وجہ سے متاثر ہوئی ہیں ۔اسی طرح سرنکوٹ میں ہوئی بارشوں کی وجہ سے کئی ایک رابطہ سڑکیں زیر آب آگئی ۔مقامی لوگوں نے تعمیر ایجنسیوں کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ سڑکوں کی تعمیر کے بعد نالیوں کا کوئی بندوبست ہی نہیں کیا گیا جس کی وجہ سے بارش کا پانی سڑکوں میں ہی نالوں کی شکل اختیار کر گیا اور اس وجہ سے کئی علاقوں میں زراعی زمینیں بھی متاثر ہوئی ہیں ۔مقامی لوگوں نے بتایا کہ دھندک سے عید گاہ مرہوٹ جانے والی رابطہ سڑک کی نالیاں نہ ہونے کی وجہ سے بارش کا پانی سڑک پر ہی جمع ہوگیا ۔انہوں نے الزام عا ئد کرتے ہوئے کہاکہ متعلقہ محکمہ کی جانب سے رابطہ سڑکوں کی نہ تو مرمت کی جاتی ہے اور نہ ہی نالیوں کا کوئی بندوبست کیا گیا جس کی وجہ سے بارشوں میں مکینوں کو شدید مشکلات کا سامناکرناپڑتا ہے ۔راجوری ضلع کی تحصیل منجا کوٹ میں ہوئی شدید بارش کی وجہ سے عام زندگی مفلوج رہی ۔تحصیل ہیڈ کوارٹر میں بارش کی وجہ سے نالہ بند ہو گیا جس کی وجہ سے کچھ دیر کیلئے جموں پونچھ شاہراہ پر گاڑیوں کی آمد ورفت کچھ دیر کیلئے بند رہی ۔تحصیل کے منگل ناڑ ،دبروٹ ،دیڑی ،دھیری رلیوٹ ،کوٹلی کالابن و دیگر علاقوں میں ہوئی شدید بارش کی وجہ سے ندی نالوں میں طوفانی صورتحال پید ہو گئی ۔