مزید خبریں

منڈی تحصیل میں جنگلی جانوروں کا قہر جاری 

رواں ہفتے میں کئے گئے حملوں میں 3افراد زخمی ہوئے 

عشرت حسین بٹ
منڈی//ضلع پونچھ کی تحصیل منڈی میں رواں ہفتے سے ریچھوں کا قہر جاری ہے اور اس ہفتے عام لوگوں پر کئے گئے حملوں میں 2خواتین سمیت 3افراد زخمی ہوگئے ہیں ۔ان حملوں میں زخمی ہوئے افراد کو مختلف علاقوں کے ہسپتالوں میں زیر علاج رکھا گیا ہے ۔ سنیچر کو تحصیل کے بیدار علاقہ کی ایک خاتون پر ریچھ نے حملہ کر کے اسے شدید طور پر زخمی کر دیا جس کی شناخت نور جہاں بیگم دختر محمد اکبرسکنہ بیدار بلنائی کے طور پر ہوئی ہے جسے بعد علاج کےلئے سب ضلع ہسپتال منڈی لایا گیا جہاں سے اس کو مزید علاج کےلئے ضلع ہسپتال منتقل کیا گیا ۔واضح رہے کہ رواان ہفتے میں منڈی کے گاوں بایلہ میں ریچھ نے دو افرادکو شدید زخمی کیا جو کہ اس وقت صورہ میڈیکل انسٹی چیوٹ سرینگر میں زندگی اور موت کی جنگ لڑ رہے ہیں ان تمام واقعات کو لے کر منڈی کی عوام میں محکمہ وائلڈلائف کے تئیں سخت غم و غصہ پا جا رہا ہے اور پوری تحصیل میں ریچھوں کی بستیوں میں آمد کی وجہ سے سخت خوف و ہراس پایا جا رہا ہے ۔تنویر احمد تانترے نامی ایک مقامی شخص نے پوری تحصیل منڈی میں اس وقت کھلے عام جنگلی جانور گھوم رہے ہیں جو دن دھاڑے مکینوں پر حملہ کر رہے ہیں مگر اس سلسلہ میں نہ ہی محکمہ وائلڈ لائف اور نہ ہی ضلع انتظامیہ لوگوں کا تحفظ کر رہی ہے۔
 
 

ڈی ایس پی ہیڈ کوارٹر پونچھ ’پی ایم جی‘ ایوارڈ سے سرفراز

حسین محتشم 
پونچھ//حکومت نے جموں و کشمیر پولیس کے کئی افسروںکےلئے غیر معمولی جرات اور صلاحیتوں کا مظاہرہ کرنے کےلئے ’پی ایم جی“ ایوارڈ کا اعلان کیا ہے جن میں ڈی ایس پی ہیڈ کواٹر پونچھ نواز احمد چوہان بھی شامل ہیں ۔چوہان کو ایوارڈ ملنے پر پونچھ کے سماجی سیاسی اور سول سوسائٹی ممبران کی جانب سے نیک خواہشات اور تمناو¿ں کا اظہار کیاجارہا ہے۔سماجی و سیاسی کارکنان نے افسران کی خدمات پر انہیں ایوارڈ سے نوازنے پرحکومت کا شکریہ ادا کیا ہے۔انہوں نے کہا ہے کہ ایوارڈ سے سرفراز کرنے سے جموں و کشمیر پولیس افسران عہدیداروں کے حوصلے مزید بلند ہوتے ہیں اور وہ لگن اور دل لگا کر اپنے فرائض انجام دیتے ہیں۔انھوں نے کہا کہ وہ خصوصی طور پر ڈی ایس پی ہیڈ کواٹر پونچھ نواز احمد چوہان کو©” پی ایم جی“ ایوارڈ سے سرفراز ہونے پر دلی مبارک باد پیش کرتے ہوئے کہا کہ وہ نہایت ہی ایمادار افسر ہیں اور اس طرح کے تمام ایوارڈوں کے مستحق ہیں۔
 
 

تحصیل سوشل ویلفیئر دفتر قابل رسائی جگہ پر بنانے کا مطالبہ 

حسین محتشم 
پونچھ// تحصیل سوشل ویلفیئر آفس پونچھ ایک نجی عمارت میں قائم ہے لیکن وہ ایک ایسے مقام پر ہے جہاں لوگوں کو پہنچنے میں کئی طرح کی دشواریوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے خصوصی طور پر گلی تنگ ہونے کی وجہ سے معذور ں کا عبورومروردشوار ہو جاتا ہے ۔سیاسی و سماجی کارکن معروف احمد کی قیادت میں ایک اجلاس منعقد ہوا جس میں سابقہ سرپنچ محمد اسحاق خان،چیرمین محمد افضل،محمد اعظم ،محمد اقبال ،محمد رفیق،محمد شریف، اقبال کھانڈے نے شرکت کی ۔اس دوران مقررین نے نہایت تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ سوشل ویلفیئرآفس ایک ایسے عماعرت میں ہے جہاں کوئی بھی گاڑی یہاں تک کہ رکشا بھی داخل نہیں ہو سکتا ۔انھوں نے کہا کہ گلیاں بہت تنگ ہیں، اگر معذور افراد آٹو رکشا یا کسی اور گاڑی میں وہاں جانا چاہیں تو ان کو پہلے دفتر ہی نہیں ملتا اگر مل بھی جائے تو وہاں ان کو پیدل جانا پڑتا ہے جو ان معذوروں کے لئے کئی طرح کے مسائل پیدا کر دیتا ہے ۔انھوں نے لیفٹیننٹ گورنر ،ضلع ترقیاتی کمشنر اور ضلع آفیسر سوشل ویلفیئر سے اپیل کی کہ دفتر کو کسی ایسی جگہ منتقل کیا جائے جہاں معذور افراد آسانی سے آجا سکتے ہوں۔اس موقعہ پر موجود کچھ معزور افراد نے انتباہ دیا کہ اگر ایک ہفتہ کے اندر دفتر کو منتقل نہ کیا گیا تو وہ سڑکوں پر اتر کر احتجاج کریں گے جس کی ذمہ داری ضلع انتظامیہ پر عائدہ ہوگی ۔
 
 

پونچھ میں 4ماہ کے بچے کی لاش برآمد

حسین محتشم
پونچھ//پونچھ کی وارڈ نمبر 17 محلہ آزاد میں جھاڑیوں سے 14 ماہ کے بچے کی لاش برآمد ہوئی، پولیس نے لاش تحویل میں لے کر ملزمان کی تلاش شروع کر دی۔مقامی لوگوں کے مطابق کچھ بچے جو کہ پتنگ بازی کھیل رہے تھے ان کو یہ لاش وہاں جھاڑیوں پڑی ہوئی دکھائی دی۔ انہوں نے اپنے والدین کو کہا تو والدین نے پولیس تھانہ فون کیا جس کے بعد فوری طور پر پولیس کی ایک ٹیم ایس ایچ او پونچھ کی قیادت میں وہاں پہنچیں اور لاش کو اپنی تحویل میں لے کر کاروائی شروع کر دی۔پولیس کا کہنا ہے کے اس کی تحقیقات کی جارہی ہے۔
 
 
 

پہاڑی طبقہ کےساتھ نا انصافیاں بند کرنے کا مطالبہ 

جاوید اقبال 
مینڈھر //پہاڑی ایکشن فورم نے کہاکہ مرکزی حکومت کا چاہئے کہ وہ پہاڑی طبقہ کےساتھ جاری نا انصافیوں کو بند کرنے کےلئے اپنا رول اداکرئے ۔یہاں جاری ایک بیان میں پہاڑی ایکشن فورم کے اراکین نے کہاکہ حالیہ کئی برسوں سے پہاڑی طبقہ کی جانب سے ایس ٹی درجہ کی مانگ کی جارہی ہے تاہم بھاجپا کی مرکزی حکومت نے بھی اس طبقہ کےساتھ کئے گئے وعدوں کو پورا نہیں کیا ۔انہوں نے کہاکہ بھاجپا کی مرکزی حکومت نے اقتدار میں آنے سے قبل طبقہ کی فلاح وبہبود کے سلسلہ میں ایس ٹی کا درجہ دینے کا وعدہ کیا تھا لیکن اقتدار میں آنے کے بعد پارٹی کی جانب سے ابھی تک مذکور ہ وعدہ پورا نہیں کیا گیا ہے ۔بیاں میں محمد عظم فانی ،خرشید میر ،رزاق خان ماسٹر عنایت اللہ خان ودیگران نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ جموں وکشمیر میں نئی حد بندی اور اس سلسلہ میں دی جانے والی ریزرویشن سے قبل ہی پہاڑی طبقہ کو ایس ٹی کا درجہ دیا جائے تاکہ طبقہ کی فلاح و بہبود ممکن بنائی جاسکے ۔انہوں نے انتباہ دیتے ہوئے کہاکہ اگر طبقہ کےساتھ نا انصافیوں کو بند نہیں کیا گیا تو اس سلسلہ میں بڑے پیمانے پر احتجاج کیا جائے گا ۔