لوہر گلہوتہ میں پینے کے پانی کی شدید قلت

مینڈھر//مینڈھر کے لوہر گلہوتہ علاقہ میں پینے کے صاف پانی کی شدید قلت پائی جارہی ہے اور ایک مہینے سے لگاتار لوگوں کو پانی سپلائی نہیں کیا جا رہا ۔ علاقہ کے لوگوں کا کہنا ہے کہ ماہ رمضان میں محکمہ کے ملازمین نے پانی کو بند کر دیا اور لوگوں کو پینے کا صاف پانی سپلائی نہیں کیا ۔وہیں ملازمین کا کہنا ہے کہ ٹرانسفارمر جل گیا ہے جبکہ لوہر گلہوتہ علاقہ میں چشموں کا پانی بھی دستیاب ہے تاہم سپلائی نہ ہونے کی وجہ سے لوگوں کو دوردراز سے پانی لاناپڑتاہے ۔لوگوں کاکہناہے کہ انہوں نے کئی بار محکمہ کے اعلیٰ آفیسران سے اپیل کی کہ علاقہ میں پانی کی سپلائی کی نہایت ہی خستہ حالت ہے اور ٹرانسفامر کو ٹھیک کر کے لوگوں کو پینے کا پانی سپلائی کیا جائے لیکن محکمہ کے آفیسران صرف ٹال مٹول کررہے ہیں اور زمینی سطح پر کوئی بھی کام نہیں ہورہا۔انہوںنے کہاکہ ایک مہینے سے بھی زیادہ وقت گزر گیالیکن لوگوں کو پانی سپلائی کرنے میں محکمہ بری طرح سے ناکام ہو گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر دو روز کے اندر پانی سپلائی نہیں کیا گیا تووہ محکمہ کے خلاف مینڈھر سرنکوٹ سڑک کو بند کرکے احتجاج کیاجائے گا کیونکہ لوہر گلہوتہ ایک ایسا علاقہ ہے جس میں بڑی تعداد میں آبادی ہے جسے پانی سے محروم رکھاجارہاہے۔ اس سلسلہ میں جب محکمہ کے ایک اعلیٰ آفیسران سے بات ہوئی تو ان کا کہنا تھا کہ جلد ٹرانسفارمر ٹھیک کر کے لوگوں کو پانی سپلائی کیا جائے گا۔