کپوارہ آ پریشن کا چوتھا دن

 کپوارہ//کپوارہ کے زرہامہ مڑہامہ علاقہ میں جنگجو مخالف آپریشن کو وسیع کرتے ہوئے کیرن سے لیکر لولاب تک کے جنگلو ں کی ناکہ بندی کی گئی ہے اور کئی دیہات کو محصور رکھا گیا ہے۔ترہگام کے زرہامہ مڑہامہ میں جھڑپ ، جس میں ایک فوجی ہلاک اور دو زخمی ہوئے تھے،کے بعد چار روز سے تلاشی مہم جاری ہے۔فوج نے زرہامہ ،مڑہامہ ،لدر ناگ ،گزریال ،وارسن جنگلات کے بعد ڈولی پورہ ،کاچہامہ  اورفرکیا ں علاقوں کے جنگلات کو بھی گھیرے میں لیکر تلاشی کارروائی شروع کی ہے ۔ فوج کو  اس بات کا شبہ ہے کہ زرہامہ جھڑپ کے دوران فرار ہوئے جنگجوئو ں نے مزکورہ علاقوں کے جنگلوں میں پناہلے رکھی ہے جس کے نتیجے میں فوج نے لون ہرے ،میلیال ،ریشی گنڈ اورزرہامہ کی سڑکو ں کی ناکہ بندی کر دی ہے اور ہر مسافر گا ڑی کی تلاشی لی جارہی ہے ۔فوج نے جمعرات کی رات کو بھی مزکورہ علاقوں کے جنگلات پر گولہ باری کی ۔زرہامہ جھڑپ کے دوسرے دن کیرن سکیٹر میں فوج اور جنگجوئو ں کے درمیان خون ریز تصادم آ رائی میں ایک فوجی اور جنگجو ہلاک ہوگئے جس کے بعد فوج نے کیرن سے لیکر لولاب تک جنگجو مخالف کارروائی شروع کی ۔ٹنگہ چک کے بعد فوج کی21,28راشٹریہ رائفلز اور سپیشل آ پریشن گروپ  نے جمعہ کی صبح شاٹھ مقام لولاب دیہات کا محاصرہ کر کے وہا ں گھر گھر تلاشی کارروائی کی ۔