کئی ماہ سے رسم افتتاح کاانتظار

 منڈی //یہ بات حیران کن مگر حقیقت ہے کہ ضلع پونچھ کے منڈی زون میںرمسا کے تحت کئی ماہ قبل تعمیر ہوئی گورنمنٹ ہائی سکول ڈنوگا م کی عمارت اس لئے طلباء کے حوالے نہیں کی جارہی کیوںکہ ا س کا کسی نے بڑی شخصیت نے افتتاح نہیں کیا جبکہ طلباء باہر بیٹھنے پر مجبور ہیں۔ ذرائع نے بتایاکہ ہائی سکول ڈنوگا م کو 2014میں اپ گریڈ کیاگیا جس کے بعد سکول کیلئے نئی عمارت کی تعمیر کاکام شروع ہواجو چار سے چھ ماہ قبل مکمل ہوگیا اور دو منزل عمارت پوری طرح سے پایہ تکمیل تک پہنچ چکی ہے مگر پھر بھی طلباء باہر بیٹھے ہوئے ہیں کیونکہ اس کا کسی بڑی شخصیت سے افتتاح نہیں ہوا۔مقامی لوگوں کاکہناہے کہ یہ وی آئی پی کلچر کی دین ہے کہ ایک سکول کئی ماہ قبل مکمل ہوگیا تاہم طلاب باہر بیٹھے ہوئے ہیں۔سابق سرپنچ بشیر نائیک کاکہناہے کہ وہ انتظامیہ کو متنبہ کرتے ہیں کہ اگر سکول بچوں کے حوالے نہ کیاگیاتو احتجاج کیاجائے گا۔محکمہ تعلیم کے ایک افسر نے نام مخفی رکھنے کی شرط پر بتایاکہ یہ نئی عمارت مکمل ہوچکی ہے لیکن افتتاح نہ ہونے کی وجہ سے اس کو استعمال میں نہیں لایاگیا۔دریں اثناء ڈپٹی کمشنر پونچھ محمد اعجاز اسد نے اس حوالے سے بتایاکہ کشمیر عظمیٰ کی طرف سے یہ معاملہ ان کے نوٹس میں لائے جانے کے بعد محکمہ تعلیم کو ہدایات جاری کردی گئی ہیں کہ نئی عمارت کو فوری طور پر استعمال میں لایاجائے اور طلباء کو اس میں منتقل کیاجائے ۔