پی ڈی پی سے نکالا گیا یوتھ کارکن گرفتار

سرینگر///سمبل پولیس نے پی ڈی پی سے نکالے گئے یوتھ کارکن معراج الدین راتھر ساکن نسبل سمبل کو نوکری کے نام ٹھگنے کے الزام میں گرفتار کر کے سلاخوں کے پیچھے پہچا دیا ہے۔ پولیس زرائع کے مطابق پولیس سٹیشن سمبل میں دس افراد پر مشتمل گروہ نے تحریری شکایت میں بتایا ہے کہ مہراج الدین نے ایس پی او بھرتی اور سیلاب متاثرین کو امدادی چیکوں کے نام پر لاکھوں روپے ہتھیا لئے ہیں اور اب رقم واپس نہیں دے رہے ہیں پولیس نے زیر دفعہ 420 کیس درج کر کے مہراج الدین کو سلاخوں کے پیچھے بند کر کے تفتیش شروع کردی ہے مہراج الدین حکمران اکائی پی ڈی پی کا یوتھ ونگ کا ورکر رہا ہے کئی ہفتے قبل تحصیلدار سمبل کے آفس چیمبر میں گھس کر تحصیلدار کو گالیاں دی ہے جس کے بعد پارٹی سے نکال دیا تھا لیکن اس کے بعد بھی پی ڈی پی کا ورکر ظاہر کرکے لوگوں کو ٹھگتا رہا ہے چنانچہ پی ڈی پی کے نائب صدر سرتاج مدنی نے صاف کر دیا ہے کہ مہراج الدین کی رکنیت ختم کر دی گئی ہے اور اسے پارٹی سے پارٹی مخالف سرگرمیوں کے نتیجے میں نکال دیا گیا ہے۔