ویری ناگ میں جنگلات محکمہ کے عارضی ملازمین کااحتجاج

اننت ناگ// محکمہ جنگلات کے عارضی ملازمین نے رینج آفس ویری ناگ دفتر کے سامنے  اپنے مطالبات کو لے کر احتجاجی مظاہرہ کیا اور دھرنا دیا۔رینج میں تعینات عارضی ملازمین تنخواہوں کی عدم دستیابی کو لے کر گذشتہ دو روز سے رینج آفس کے سامنے دھرنے پر بیٹھے ہیں۔عارضی ملازمین کا کہنا ہے کہ وہ لوگ گذشتہ نو ماہ سے مشاہیرے سے محروم ہیں۔جس کے باعث انہیں مالی مشکلات کا سامنا ہے۔ملازمین سے پورے ماہ کام لیا جاتا ہے لیکن بدقسمتی سے تنخواہ صرف عید یا کسی تہوار پر ہی نصیب ہوتی ہے۔ایک احتجاجی ملازم نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ رینج میں قریباً 75 عارضی ملازمین تعینات ہیں جن میں سے اثررسوخ اور سفارش والے ملازمین کو ماہانہ مشاہیرہ واگذار کیا جاتا ہے جبکہ قریباً 21 ملازمین استحصال کا شکار ہورہے ہیں۔احتجاجی ملازمین نے مانگ کی کہ انکی رُکی پڑی تنخواہیں جلد واگذار کی جائیں۔رینج آفیسر ویری ناگ شیخ امتیاز کا کہنا ہے کہ اننت ناگ ڈویژن میں 234 ملازمین کے حق میں بجٹ کے مطابق تنخواہیں واگذار ہوتی ہیںاور باقی بچے ملازمین فی الحال بجٹ میں شامل نہیں ہیں ، تاہم معاملہ فائنانس محکمہ کے پاس ہے اور بہتر نتائج کی امید ہے۔