وکرما دتیہ کا جتیندر سنگھ پر ترقی کے نام پر ہوائی محل تعمیرکرنیکا الزام

کٹھوعہ //سینئر کانگریس لیڈر و اودہمپور۔کٹھوعہ ۔ڈوڈہ کے کانگریس کے نامز د امید وار وکرما دتیہ سنگھ نے منگل کے روز ڈاکٹر جتیندر پر ترقی کے نام پر ہوئی قلعے بنانے کا الزام لگایا ، جو کہ حقیقت میں کہیں بھی وجود میں نہیں ہیں۔انہوں نے کہا کہ لوگ بنیادی سہولیات کے لئے ترس رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ایم پی کے حلقہ میں کسان ،بیروز گار نوجوان،سرحدی لوگوں ،بیمار و سماج کے دیگر طبقہ کے لوگوں کے مشکلات میں کئی گنا اضافہ ہوا ہے ۔انہوں نے الزام لگایا کہ موجودہ ایم پی نے اپنے چار سال کے دور میں لوگوں کے ساتھ کوئی رابطہ نہیں رکھا ہے اور اب غیر مدعے اُٹھا کر انہیں دوبارہ بے وقوف بنانے کی کوشش کر رہے ہیں۔ایک بیان کے مطابق کٹھوعہ کے متعدد دیہات میں عوامی اجلاسوںسے خطاب کرتے ہوئے وکرما دتیہ نے کہا کہ ڈاکٹر جتندر سنگھ پہلی اور آخری مرتبہ  2014 میںممبر پارلیمنٹ بن گئے ہیں کیوںنہ لوگ بی جیپی لیڈروں کی جملہ بازی میں بہہ گئے تھے۔انہوں نے ڈاکٹر جتندر سنگھ پر کوئی سیاسی بصیرت نہ ہونے کا الزام لگایا ۔انہوں نے کہا کہ علاقہ کے لوگوں کو اب اپنی غلطی کا احساس ہو گیا ہے اور وہ اب کانگریس کی طرف اپنی نگاہیں بیٹھے ہوئے ہیں۔کانگریس کے منشور کا حوالہ دیتے ہوئے وکرما دتیہ نے کہا کہ اس منشور میں عام لوگوں کو سہولیت فراہم کرنے کا وعدہ کیا گیا ہے نہ کہ بی جے پی کے دور میں فقط بعض صنعت کاروں کو۔انہوں نے کہاکہ کانگریس نے ملک کے ہر غریب کنبہ کو فی ماہ 6ہزار روپے ادا کرنے کا وعدہ کیا ہے جس کو پارٹی نے سوچ و سمجھ کے منشور میں شامل کیا ہے