منریگا کے تحت وادی میں6400کام دردست

 سری نگر//دیہی ترقی محکمہ کے ناظم طارق احمد زرگر نے یہاں ایک میٹنگ کے دوران مرکزی معاونت والی سکیموں مع مختلف ترقیاتی سکیموںپر ہورہے کام کی پیش رفت کا جائزہ لیا۔میٹنگ میں جوائنٹ ڈائریکٹر دیہی ترقی ، ایس ای  آر ڈبلیو کشمیر ، ڈپٹی ڈائریکٹر پلاننگ ، اسسٹنٹ کمشنران ڈیولپمنٹ ، اسسٹنٹ کمشنران پنچایتیں ، ڈی پی اوز ، صوبہ کشمیر کے ایگزیکٹیو اِنجینئران نے شرکت کی۔دورانِ میٹنگ محکمہ دیہی ترقی کشمیرکی عملائی جانے والی مختلف سکیموں کے حوالے سے پاور پوائنٹ پرزنٹیشن کے ذریعے تفصیل دی گئی۔ڈائریکٹر نے مختلف فلیگ شپ پروگراموں کا تفصیلی جائزہ لیا ،جن میں منریگا ، پی ایم اے وائی جی ، پی ایم اے وائی جی کے تحت رورل میسن ٹریننگ پروگرام ، آر ڈی اے کیسوں کی صورتحال، اے سی بی کی شکایات اور آن لائن گریوینس کے علاوہ 14 ویں ایف سی کے تحت طبعی اور مالی پیش رفت بھی شامل ہے۔میٹنگ کو بتایا گیا کہ رواں مالی سال2021-22کے 70003کاموں کے ہدف میں سے منریگا کے تحت 6400 کام ہاتھ میں لئے گئے ہیں جس سے 10.46 لاکھ اَفراد کے لئے ایام کار پیدا ہوں گے۔ آر جی ایس اے کے تحت 86 پنچایت گھروں کی تعمیرکا ہدف مقررکیا گیا ہے جن میں سے اَب تک10 کی تعمیرمکمل ہوچکی ہیں۔ڈائریکٹر نے افسران سے کہا کہ وہ منریگا کے تحت اجرتوں کی ادائیگی کو مقررہ وقت کے اندرواگذار بنانے کو یقینی بنائیں اور اس کے علاوہ نئے کاموں کو شروع کریں تاکہ کووِڈ۔19 میں وبائی مرض کے دوران دیہی مزدوروں کو مدد فراہم کی جاسکے۔ اُنہوں نے افسران پر زور دیا کہ وہ پی آر آئی ممبران کے ساتھ ہم آہنگی کو یقینی بنائیں تاکہ ترقیاتی اہداف کو حاصل کیا جاسکے اور اس کے علاوہ ایس او پیز پر عمل پیرا ہونے سے متعلق بیداری پھیلائے ۔