ملک دشمنوں کو کٹہرے میں لایا جائے: چُگ پاکستان کے حق میں نعرہ بازی کرنے والوںکیخلاف کیس درج کرنے کا دفاع کیا

عظمیٰ نیوز سروس

جموں//بی جے پی کے قومی جنرل سکریٹری ترون چگ نے ان عناصر کی شدید مذمت کی جنہوں نے کرکٹ ورلڈ کپ کے تناظر میں ملک دشمن جذبات کو ہوا دینے کی کوشش کی اور کہا کہ ایسی قوتوں کے خلاف کارروائی کی جانی چاہیے جو پاکستان کے حامی جذبات کو بھڑکانے اور معاشرے میں تفرقہ پھیلانے کی کوشش کرتے ہیں۔انکا کہناتھا کہ ایسے وقت میں جب وزیر اعظم نریندر انہوں نے کہا کہ مودی جموں و کشمیر کی خوشحالی کے لیے متعدد ترقیاتی اور ترقی پسند اقدامات کر رہے ہیں، ایسے ناپاک عناصر کو روکا جانا چاہیے جو خلل ڈالنے والا کردار ادا کرتے ہیں۔اس معاملے پر سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کے موقف کی مذمت کرتے ہوئے چگ نے ایسے عناصر کے خلاف ایف آئی آر کے اندراج کو جائز قرار دیا، جنہوں نے نہ صرف مقامی لوگوں کو آگاہ کرنے کی کوشش کی بلکہ پاکستان کی عزت افزائی کی بھی کوشش کی۔چُگ نے کہا کہ ایسی قوتوں کو مثالی سزا دی جانی چاہیے ۔یہ کہتے ہوئے گاندربل میں ملک دشمن عناصر کی بکنگ ایک خوش آئند قدم ہے، چُگ نے کہاکہ ” محبوبہ مفتی کی دوہری تقریر نے ہمیشہ جموں و کشمیر اور یہاں کے لوگوں کو تکلیفیں پہنچائی ہیں۔”انکامزید کہناتھا” محبوبہ مفتی کے ذریعہ پولس کے ذریعہ سات ملک دشمن عناصر کی بکنگ پر کہے گئے الفاظ انتہائی قابل مذمت ہیں۔ پی ڈی پی سربراہ نے ہمیشہ جموں و کشمیر کے لوگوں کے لئے مصائب اور مشکلات لائی ہیں، اور جموں و کشمیر کو بحرانی حالات میں دھکیل دیا ہے جہاں سے وزیر اعظم نے حالات کو بچایا ہے‘‘۔چُگ نے مزید کہا، جو قوتیں پاکستان کے حق میں نعرے لگا کر بھارت مخالف جذبات کو جنم دینے کی کوشش کرتی ہیں، انہیں فیصلہ کن طور پر روکنے کی ضرورت ہے تاکہ جموں و کشمیر میں عام آدمی پرامن طریقے سے مودی حکومت کے مختلف ترقیاتی اقدامات کے ثمرات سے لطف اندوز ہو سکے۔چُگ نے کہا کہ کسی بھی کھیل میں کوئی بھی ٹیم جیت سکتی ہے یا ہار سکتی ہے لیکن اس سب کو ایک ملک دشمن محاورے میں بدلنا یقینا ملک دشمن طاقتوں کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کرتا ہے، خاص طور پر سرحدی یونین ٹیریٹری میں، جہاں سیکورٹی فورسز مخالفوں سے لڑ رہی ہیں ۔