مغل شاہراہ کی بحالی اب زیادہ دور نہیں

سرنکوٹ//پیر پنچال خطہ کو وادی ٔ کشمیر سے جوڑنے والی تاریخی مغل شاہراہ کی بحالی اب زیادہ دور نہیں ہے کیونکہ حکام نے ایک ہفتہ کے اندر اندر برف ہٹانے کا عمل شروع کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے۔خیال رہے کہ یہ شاہراہ گزشتہ پانچ ماہ سے بند پڑی ہے اور عوامی سطح پر مسلسل مطالبہ کیاجارہا ہے کہ اس کو بحال کیاجائے۔ سرنکوٹ کے لوگوں کا کہنا ہے کہ مغل شاہراہ کو جلدبحال کیا جائے تاکہ لوگوں کو کشمیرآنے جانے میں آسانی ہوسکے۔ ان کا کہنا تھا کہ مغل شاہراہ سے برف ہٹانے کا عمل شروع کیا جائے تاکہ راجوری پونچھ کے کئی لوگوں کو ان کے گھر میں پڑے مریضوں کے لئے دوائیاں سرینگر جیسے ہسپتالوں سے لانے میں آسانی ہوسکے۔ ان کہنا تھا کہ مغل شاہراہ بند ہونے کی وجہ سے راجوری پونچھ کے لوگ بڑے مایوس ہوتے ہیں اور گورنر انتظامیہ کو خاص توجہ دے کر شاہراہ پر کام جلد شروع کروانا چائے۔ رابطہ کرنے پر ایگزیکٹیوانجینئر مغل روڈڈویژن لیاقت چوہدری نے بتایا کہ موسم اب صاف ہو گیا ہے اور شاہراہ سے برف ہٹانے کا عمل ایک ہفتے میں شروع ہو گا۔انہوںنے امید ظاہر کی ہے کہ اسی ماہ شاہراہ قابل آمدورفت ہوجائے گی۔