مزید خبرں

کانگریس کا امر ناتھ یاترا کے دوران تمام گاڑیوں کو ٹول ٹیکس سے مستثنیٰ رکھنے کا مطالبہ 

جموں//کانگریس پارٹی نے شری امر انتھ جی یاترا کے دوران تمام قسم کی گاڑیوں کو ٹول ٹیکس سے چھوٹ دینے کا مطالبہ کیا ہے۔ ایک بیان  میں سابقہ وزیر و کانگریس کے ایک سینئر لیڈر مولا رام نے سرکار پر جموں خطہ میں بھی امر ناتھ یاترا کے دوران تام قسم کی گاڑیوں کو ٹول ٹیکس سے چھوٹ دینے پر زور دیا ہے۔ انہوں نے  سرکار سے شری امر ناتھ جی یاترا خوش اسلوبی سے منعقد کرنے کے لئے تمام تر انتظامات  مکمل کرنے پر زور دیا ۔ کانگریس لیڈر بدھ کے روز ضلع کانگریس نگرکمیٹی کی جانب سے منعقدہ ایک اجلاس سے خطاب کر رہے تھے ،جس کا اہتمام ضلع صدر ہری سنگھ چب نے کیا تھا ۔مولا رام نے کہا کہ سرکار کی یہ ذمہ واری ہے کہ وہ ملک بھر سے آنے والے شری امر ناتھ جی  یاتریوں کو تمام قسم کی سہولیات فراہم کرے، قابل ذکر ہے کہ صوبائی کمشنر کشمیر بسیر احمد خان نے شری امر ناتھ جی یاترا کے دوران تمام گاڑیوں کو قومی شاہراہ کے چھچھکوٹ ٹول پلازہ پر ٹول ٹیکس سے چھوٹ دینے کے ہدایات جاری کئے ہیں۔مولا رام نے صوبائی کمشنر کشمیر کے بر وقت فیصلہ کی ستائش کی ہے اور کہا ہے کہ ایسے قسم کے اعلانات سے آپسی وا داری کو فروغ حاصل ہوگا ،جو کہ وقت کی ضرورت ہے لیکن یہ بدقسمتی کی بات ہے کہ صوبائی کمشنر جموں نے ابھی تک اس سلسلہ میں کوئی بھی اعلان جاری نہیں کیا ہے۔ہری سنگھ چب نے اپنے خطاب میںکہا کہ ملک بھر سے ایک کروڑ سے زائد یاتری شری ماتا ویشنو دیوی اور بابا امر ناتھ جی کے درشنوں کے لئے ریاست کا دورہ کرتے ہیں،جس پر ریاست کی اقتصادی حالت پر منحصر ہے۔انہوں نے کہا کہ اگر سرکار لکھن پور سے بیس کیمپ بال تل تک تامما ٹول پلازہوں پر ٹول ٹیکس معاف کرے گی ،تو اس سے یقینی طور ریاست میں سیاحت کو فروغ حاصل ہوگا۔انہوں نے گورنر ستیہ پال ملک سے اس سلسلہ میں فوری طور اعلان کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔اجلاس میں ویریندر کیسر ،راج کمار، امت ٹھاکور، بھارت ببھوشن ،اشوک ڈوگرہ، رنجیت سنگھ اور پریتم سنگھ نے بھی شرکت کی۔ 
 
 

شیعہ فیڈریشن کا مغل شاہراہ سڑک حادثے پر اظہار دکھ

جموں//شیعہ فیڈریشن نے مغل شاہراہ پر پیش آئے دلدوز سڑک حادثے پر گہرے دکھ کا اظہار کیاہے ۔ اپنے ایک بیان میں فیڈریشن صدر عاشق حسین خان نے کہاکہ اس دردناک حادثے پر انہیں گہرا صدمہ پہنچاہے اور وہ دکھ کی اس گھڑی میں مرنے والی طالبات کے لواحقین کے ساتھ برابر کے شریک ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ اس حادثے سے ایک بار پھر یہ ثابت ہوگیاہے کہ سڑکوں پر جاری موت کے رقص پر پابوپانے میں حکام بری طرح سے ناکام ہوگئے ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ سڑک حادثات ریاست میں غیر طبعی اموات کی سب سے بڑی وجہ ہے اور اس پر روک لگانے کیلئے ضروری ہے کہ سنجیدگی سے اقدامات کئے جائیں اور ٹریفک قوانین کی پاسداری کو یقینی بنایاجائے ۔ انہوں نے کہاکہ اس حادثے سے سرنکوٹ میں کئی گھروں میں ماتم چھایاہے جس کا ذمہ دار کون ہے ،اس کا تعین کرناہوگا۔
 
 

مغل روڈ سڑک حادثہ 

کانگریس نے جانوں کے زیاں پر دکھ کا اظہار کیا

جموں //کانگریس پارٹی نے پیر کی گلی میں ہوئے سڑک حادثہ پر دکھ کا اظہار کیا ہے ۔ ایک تعزیتی بیان میں پارٹی کے ایک سینئر لیڈرراجیہ سبھا میں حزب اختلاف کے قائد غلام نبی آزاد نے پیر کی گلی میں ہوئے سڑک حادثہ میں قیمتی جانوں کا زیاں اور متعدد زخمی ہونے پر سخت دکھ کا اظہار کیا ۔انہوں نے لواحقین کے ساتھ دلی ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے ہلاک شدگان کے ابدی سکون کی دعا کی ہے۔انہوں نے زخمیوں کے ساتھ بھی ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے ان کی فوری صحتیابی کی دعا کی ہے۔ دریں اثنا ،کانگریس کے متعدد لیڈروں نے بھی اس حادثہ پر دکھ کا اظہار کیا ہے ،جس میں11قیمتی جانیں تلف ہوئی ہیں اور دیگر 9زخمی ہوئے ہیں۔ایک تعزیتی بیان میں سینئر لیڈروں نے اس المناک حادثہ پر دکھ کا اظہار کیا ہے۔انہوں نے دکھ زدگان کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کیا ہے اور اللہ سے دعا گوں ہے کہ وہ لواحقین کو یہ صدمہ برداشت کرنے کی ہمت عطا کرے۔ان لیڈروں نے حادثہ کے وجہ کی مکمل تحقیقات کرنے کا مطالبہ کیا ہے اور قانون کے تحت حادثہ کی ذمہ واری تعین کرکے باقاعدگی سے ہو رہے سڑک حادثات کو روکنے کیلئے اقدام کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔انہوں نے ہلاک شدگان کے لواحقین میں معقول معاوضہ منظور کرنے  اور زخمیوں کابہتر علاج کرنے کا بھی مطالبہ کیا ہے ۔تعزیتی بیان پر رمن بھلہ، رویندر شرما ، شبیر خان ، چودھری محمد اکرم ، اشوک شرما ، چودھری عبدالغنی، جہانگیر حسین میر، چودھری ظفر اللہ ،ایس راجندر سنگھ کاکا و دیگران کے دستخط ثبت ہیں۔
 
 
 

کانگریس کی ہریانہ میں پارٹی لیڈر کے قتل کی مذمت 

جموں //جموں و کشمیر پردیش کانگریس کمیٹی نے ہریانہ میں کانگریسی لیڈر کے دن دہاڑے قتل کی مذمت کی ہے۔ پارٹی کے ریاستی ترجمان رویندر شرما نے ایک پریس بیان میں کہا ہے کہ ہریانہ کانگریس کے ترجمان وکاس چودھری کی دن دہاڑے قتل سے ہریانہ میں کھٹر سرکار کے امن و قانون کے صورتحال کی عکاسی ہو تی ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ بدقسمتی کی بات ہے کہ ہریانہ کے وزیر اعلیٰ کھٹرکو کئی گھنٹوں تک اس قتل کی جانکاری نہیں ملی تھی۔انہوں نے کہا کہ ہریانہ میں امن و قانون کی صورتحال نہایت ہی ابتر ہے ،جو اس حقیقت سے عیاں ہے کہ گذشتہ ایک سال میں ہریانہ میں 1087 قتل کے واقعات ، خواتین کے خلاف 1681جرائم ، اغوا کاری کے 3763 معاملات اور ڈکیتی کے  310 معاملات درج ہوئے ہیں۔ کانگریس کے ریاستی کسان سیل کے چیر مین چودھری گھارو رام نے بھی وکاس چودھری کے قتل کی کافی مذمت کی ہے اور لواحقین کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ کھٹر سرکار ریاست میں جرائم پر قابو پانے میں ناکام رہی ہے۔
 
 
 

کے سکند ن 28جون کو جموںمیں لوگوں کے مسائل سنیں گے 

 سری نگر//گورنر کے مشیر کے سکند ن 28؍جون 2019 ء کو کنونشن سینٹر روڈ جموں میں صبح 10بجے سے دوپہر 12بجے تک عوام کی شکایت سننے کے موجود رہیں گے۔جو وفود اور افراد اپنے مسائل اور مطالبات کو اُجاگر کرنا چاہتے ہوں وہ مشیر موصوف کے ساتھ اس دِن ملاقات کرسکتے ہیں۔
 
 
 

جموں مسلم فرنٹ کا منشیات کے بڑھتے رحجان پر تشویش کا اظہار 

جموں //جموں مسلم فرنٹ نے ریاست کے نوجوانوں میں منشیات کے بڑھتے رحجان پر سخت تشویش کا اظہار کیا ہے۔ایک بیان کے مطابق فرنٹ کے چیرمین شجاع ظفر کی قیادت میں جمعرات کے روز یہاں گوجر نگر میں ایک اجلاس کا انعقاد کیا گیا، جس میں ریاست کے نوجوانوں میں منشیات کے بڑھتے رحجان پر تشویش کا اظہار کیا۔ اجلاس میں بتایا گیا کہ ریاست کے ہزاروں نوجوان خصوصاً 17-30 سال کی عمر کے نوجوان بلا لحاظ مذہب و عقیدہ کے اس میں ملوث ہوئے ہیں،جس سے ان کا کئیر ئیر تباہ ہوگیا ہے۔انہوں نے اس بات پر تشویش کا اظہار کیا گیا کہ منشیات کی بدعت اب سکول جانے والے بچوں اور کمسن میں بھی پھیل گئی ہے۔جے ایم ایف لیڈروں نے ریاست جموں و کشمیر میں منشیات کی بدعت پھیلانے میںبعض بیرونی طاقتوں کے ہاتھ کے شک کا اظہار کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ دشمن عناصر لگاتار اس کوشش میں ہیں کہ وہ بھارت کو اپنا نشانہ بنا ئیں ،تاکہ ملک کی نوجوان آبادی کو ذہنی طور سے مفلوج بناکر سماج کو کمزور بنایا جا سکے۔اجلاس میں ریاست کے نوجوانوں سے منشیات سے دور رہنے کی اپیل کی گئی اور پہلے ہی منشیات کی دلدل میں پھنسے ہوئے نوجوانوں سے اخلاقی معاونت کرنے کی اپیل کی ،تاکہ وہ اس بدعت سے باہر آسکیں۔انہوں نے ریاستی انتظامیہ اور پولیس سے منشیات فروشوں پر نگاہ رکھنے کی اپیل کی،تاکہ نوجوان پیڑھی کو منشیات کی بدعت سے محفوظ رکھا جا سکے۔