سریکلچر ہماری معیشت کا قابل عمل شعبہ | صوبائی کشمیرکی محکمہ کے کلینڈرکی نقاب کشائی

عظمیٰ نیوز سروس

سرینگر//صوبائی کمشنر کشمیر وجے کمار بدھوری نے منگل کو سریکلچر ڈیولپمنٹ ڈپارٹمنٹ کے سالانہ وال کلینڈر 2024 کی نقاب کشائی کی۔ڈائریکٹر سریکلچر اعجاز احمد بٹ بھی اس موقع پر موجودتھے۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے صوبائی کمشنر نے کہا کہ سریکلچر کا شعبہ ہماری معیشت کا ایک قابل عمل شعبہ ہونے کی وجہ سے جموں و کشمیر کی ایک بڑی آبادی کو روزی روٹی فراہم کرتا ہے۔اس سلسلے میں محکمہ کی کوششوں کی تعریف کرتے ہوئے بدھوری نے کہا کہ محکمہ کی طرف سے جموں و کشمیر کے لوگوں میں سریکلچر سیکٹر کی صلاحیتوں سے فائدہ اٹھانے کیلئے محکمہ کی مختلف اسکیموں، سہولیات اور سرگرمیوں کے بارے میں بیداری پھیلانے کیلئے کثیر الجہتی نقطہ نظر اپنایا جا رہا ہے۔ سالانہ وال کیلنڈر اس سمت میں محکمہ کی طرف سے کئے گئے اقدامات میں سے ایک ہے۔انہوں نے کہا کہ ریشم کے کیڑے پالنے کی سرگرمیاں زیادہ منافع کے ساتھ موثر ہیں۔ انہوں نے ہدایت کی کہ ریشم کے کیڑے پالنے کے فوائد سے عوام کو آگاہ کرنے کے لیے ایک تشہیری مہم چلائی جائے اور اس مقصد کے لیے ہر دستیاب میڈیا کو تلاش کیا جائے۔اس موقع پر ڈویژنل کمشنر نے ڈائریکٹر سریکلچریقین دلایا کہ کشمیر صوبے میں شہتوت کی نرسریوں اور فارموں کی ترقی کے لیے خالی سرکاری زمین فراہم کی جائے گی۔اس موقع پر ڈائریکٹر سریکلچر نے بڑے پیمانے پر شہتوت کی خالی سرکاری زمینوں پر شجرکاری شروع کرنے کی اہمیت کو اجاگر کیا تاکہ شہتوت کی اعلیٰ اوربہتر نرسریوں/فارموں کو بڑھایا جا سکے تاکہ پیداواری صلاحیت میں اضافہ ہو اور جموں و کشمیر میں ریشم کے کیڑے پالنے کے لیے شہتوت کے پتوں کو آسانی سے دستیاب رکھا جاسکے۔