جموں کشمیر میں2فوت، 442متاثر

 سرینگر // جموں و کشمیر میں کورونا وائرس کی دوسری لہر میں شدت برقرار ہے۔ سوموار کو مزید 442افراد کی رپورٹیں مثبت آئی ہیں۔ اس دوران کشمیر میں 2افراد وائرس سے فوت ہوگئے۔ یہ بات قابل ذکر ہے کہ اتوار کو رواں سال کے سب سے بڑے اچھال کے دوران 573افراد کی رپورٹیں مثبت آئی تھیں جبکہ 3افراد کو وائرس نگل گیا تھا۔ پچھلے 24گھنٹوں کے دوران 35ہزار257افراد کے کورونا ٹیسٹ کئے گئے جن میں 442افراد کی رپورٹیں مثبت آئیں جن میں 162جموں جبکہ کشمیر میں 280افراد کی رپورٹیں مثبت آئی ہیں۔ کشمیر کے 280متاثرین میں  248مقامی سطح پر جبکہ 32بیرون ریاستوں اور ممالک کا سفر کرنے کے بعد کشمیر آئے ہیں۔ اس دوران کولگام سے تعلق رکھنے والے 2افراد وائرس سے فوت ہوگئے۔مرنے والوں میں  دیدی پورہ کا 70سالہ اور کنجی گنڈ کولگام کا 60سالہ شخص شامل ہیں۔کشمیر میں متاثرین کی مجموعی تعداد 79925ہوگئی ہے جن میں سے 1269افراد فوت ہوگئے جبکہ سرگرم معاملات کی تعداد 3130ہوگئی ہے۔ سرگرم معاملات میں سرینگر میں  1560، بارہمولہ میں 618، بڈگام میں313، پلوامہ میں 103، کپوارہ میں 115، اننت ناگ میں  90، بانڈی پورہ میں 73،  گاندربل میں 53، کولگام میں 169اور شوپیان میں 36افراد زیر علاج ہیں۔ جموں صوبے میں سوموار کو کورونا متاثرین کی تعداد 162تک پہنچ گئی۔ ان میں 105مقامی سطح پر جبکہ 57بیرون ریاستوں اور ممالک سے جموں آئے ہیں۔ جموں صوبے میں متاثرین کی تعداد 53ہزار 529ہوگئی ہے جن میں ابتک 741فوت ہوگئے جبکہ سرگرم معاملات کی تعداد 1024ہوگئی۔ سرگرم معاملات میں جموں میں 706، ادھمپور میں 53، راجوری میں 33، ڈوڈہ میں 13، کٹھوعہ میں 82، سانبہ میں35، کشتواڑ میں 18، پونچھ میں 25، رام بن میں 24 اور ریاسی میں 35افراد زیر علاج ہیں۔  
 
 
 

طبی اور نیم طبی عملہ کی چھٹیاں منسوخ

پرویز احمد 
 
 سرینگر //مرکزی زیر انتظام جموں و کشمیر میں کورونا متاثرین کی تعداد میں ہر گزرتے دن کے ساتھ اضافہ کے بعدمحکمہ صحت نے کشمیر میں تمام ڈاکٹروں، نرسوں اور نیم طبی علہ سے جڑے افراد کی چھٹیوں کو منسوخ کردیا ہے۔ ڈائریکٹر ہیلتھ سروسز کشمیر کی جانب سے جاری کئے گئے سرکیلور زیر نمبر EST-I/NG/188-1214میں تمام چیف میڈیکل آفسران اور میڈیکل سپر انٹنڈنٹوں کو ہدایت دی ہے کہ وہ  محکمہ صحت کے زیر نگرانی کام کرنے والے تمام اسپتالوں میں ڈاکٹروں، نرسوں اور نیم طبی عملہ سے جڑے افراد کی چھٹیوں کو  منسوخ کردیں۔ حکم نامہ میں لکھا گیا ہے کہ ڈائریکٹر ہیلتھ ، چیف میڈیکل آفسران اور ڈی ڈی آوز کے تحت کام کرنے والے ڈاکٹروں نرسوں اور دیگر نیم طبی عملہ کی منظور شدہ اور زیر غور تمام چھٹیوں کو منسوخ کیا جارہا ہے تاہم اس حکم نامہ سے زچگی اور لازمی طبی ضرورت کیلئے حاصل کی گئی۔ حکم نامہ میں چیف میڈیکل آفیسر اور میڈیکل سپر انٹنڈنٹوں کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ کسی کی بھی چھٹی کی درخواست کو ڈائریکٹر آفیس روانہ نہ کریں۔ یہ بات قابل ذکر ہے کہ جموں و کشمیر میں  میں اضافہ دیکھنے کو مل رہا ہے اورلفٹنٹ گورنر نے اتوار کو 12ویں جماعت تک کے سکولوں کو بند کرنے کا علان کیا تھا۔ 
 

 

 

لیفٹیننٹ گورنر کا کورونا میں مبتلا مظفر حسین بیگ اور ان کی اہلیہ کو فون 

نیوز ڈیسک
 
 جموں //لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے جموں و کشمیر کے سابق نائب وزیر اعلیٰ مظفر حسین بیگ اور ان کی اہلیہ سفینہ بیگ سے بات کی اور ان کی صحت و تندرستی کے بارے میں جانکاری حاصل کی۔اُنہوں نے ان کی جلد شفایابی اور لمبی عمر کے لئے دعا کی۔ مظفرحسین بیگ اور ان کی اہلیہ کووِڈ۔19 کے ٹیسٹ مثبت ہونے کے بعدہوم قرنطین ہیں، جہاں ڈاکٹر باقاعدگی سے اُن کی صحت کی نگرانی کر رہے ہیں۔