ترال میں کم عمرجنگجو سپرد خاک

   ترال //ترال میں منگل کو مقامی جنگجو عادل رشید چوپان کی ہلاکت کے خلاف مکمل ہڑتال کی گئی۔ 17عادل کو منگل کی صبح اپنے آبائی گاؤں لرو جاگیر میں ہزاروں لوگوں کی موجودگی میں سپرد خاک کیا گیا۔اس دوران رقت آمیز مناظر دیکھنے کو ملے۔عادل کے جلوس جنازہ میں چار مسلح جنگجوؤں نے نمودار ہوکر مہلوک جنگجو کو گن سلوٹ پیش کیا جبکہ شرکائے جنازہ نے کشمیر کی آزادی کے حق میں شدید نعرے بازی کی۔کم عمر جنگجو کی ہلاکت کے خلاف ترال کے بیشتر علاقوں میں منگل کو مکمل ہڑتال رہی جس کے دوران دکانیں اور تجارتی مراکز بند رہے جبکہ سڑکوں پر گاڑیوں کی آمدورفت معطل رہی۔ سرکاری دفاتر اور بینکوں میں معمول کا کام کاج متاثر رہا جبکہ بیشتر تعلیمی ادارے احتیاطی طور پر بند رہے۔ قصبہ میں موبائیل انٹرنیٹ خدمات گذشتہ شام سے بدستور منقطع رکھی گئی ہیں۔ قابل ذکر ہے کہعادل حمید گولی لگنے سے زخمی ہونے کے بعد فرار ہونے کے دوران سیر جاگیر اور لرو کے درمیان نالے میںجاں بحق ہوا تھا جبکہ ذرائع کے مطابق اس واقعے میںمزکورہ جنگجوں کے دو ساتھی فرار ہونے میں کامیاب ہوئے ۔ فورسز نے گزشتہ شام ہی کچھ نوجوانوں کولرو سے اپنے ساتھ لیا جن میں دو کو دسویں جماعت کے امتحان میں شامل ہونے کے پیش نظربدھ کی صبح رہا کیا گیا تاہم دیگر دو نوجوان ابھی بھی حراست میں ہیں۔