امریکی ریاست کولوراڈو کے جنگلات میں آتشزدگی | متعدد افراد زخمی ،سینکڑوں مکان تباہ ، ہزاروں افراد کا انخلا

ڈینور /امریکی ریاست کولوراڈو کے جنگل میں تیزی سے پھیلنے والی آگ سے سینکڑوں گھر تباہ جبکہ درجنوں افراد زخمی اور لاکھوں رہائشی انخلا پر مجبور ہو گئے ہیں۔اس آگ کے بارے میں خیال ہے کہ یہ بجلی کی تاروں اور ٹرانسفارمرز میں لگی جس نے دیکھتے ہی دیکھتے رہائشی علاقوں کو اپنی لپیٹ میں لے لیا۔کولوراڈو کی میونسپلٹی بولڈر کے ہنگامی حالات سے نمٹنے کے ادارے نے اپنی ایک ٹویٹ میں بتایا ہے کہ ’انخلا کے احکامات سب سے پہلے سپیریئر کے علاقے کیرہائشیوں کے لیے جاری کیے گئے جس کی آبادی 13 ہزار ہے۔ اس کے بعد 18 ہزار افراد پر مشتمل لوئزوائل کے رہائشیوں کو بھی علاقہ خالی کرنے کا کہا گیا۔‘کولوراڈو کی میونسپلٹی بولڈر کے محکمہ موسمیات نے ٹویٹ میں لکھا کہ ’سپیریئر کے مکمل علاقے کے لیے انخلا کے احکامات ہیں۔ یہاں سے ابھی نکلیں۔‘حکام کا کہنا ہے کہ کچھ ہی گھنٹوں میں آگ کے شعلوں نے ایک ہزار 600 ایکڑ کے رقبے کو اپنی لپیٹ میں لے لیا اور 500 سے زائد مکانات تباہ کر دیے ۔ادھرآسٹریلیا میں اپنے حقوق کے لیے احتجاج کرنے والے قبائلی باشندوں نے کینبرا میں پارلیمان کی پرانی عمارت کو آگ لگا دی۔ خبررساں اداروں کے مطابق قبائلی باشندے کئی روز سے مظاہرہ کر رہے ہیں اور آسٹریلوی حکومت سے قبائلیوں کو حقوق دینے کا مطالبہ کررہے ہیں۔ ذرائع ابلاغ کے مطابق کینبرا میں موجود آسٹریلوی پارلیمان کی پرانی عمارت کے باہر مظاہرین کو منتشر کرنے کی کوشش کی گئی تھی،جس پر مشتعل مظاہرین نے پارلیمان کے مرکزی دروازے کو آگ لگا دی۔