آخر یہ خوف و ہراس کب تک:میر

 سرینگر//کشمیری نوجوان کے مستقبل کو محفوظ رکھنے کےلئے امن وامان کو ناگزیر قرار دےتے ہوئے ریاستی کانگریس صدر غلام احمدمیر نے کہا کہ تمام ہم خیال لوگوں کو آگے آکر کشمیر میں قیام امن کےلئے اپنا کلیدی کردار ادا کرنا ہوگا ۔ ایک بیان میں میر نے کشمیر کی موجودہ صورتحال پر تشویش کا اظہار کیا ۔انہوں نے سوالیہ انداز میں کہا’ آخر کب تک کشمیر ی عوام خوف وہراس میں زندگی گزار یں گے ‘۔ان کا کہناتھا کہ تمام ہم خیال لوگوں کو آگے آکر کشمیر میں امن کے حوالے سے اپنا کردار ادا کرنا چاہئے ۔انہوں نے کہا ہے کہ وقت آگیا ہے کہ امن پسند لوگ کشمیر میں قیام امن کےلئے اپنا کردار ادا کریں ۔انہوں نے مزید کہا کہ امن سے ہی کشمیری نوجوانوں کے مستقبل کو محفوظ و تابناک بنایا جاسکتا ہے ۔غلام احمد میر نے کہا کہ غیر یقینی صورتحال اور بد امنی کی وجہ سے صرف اور صرف عام لوگ ہی متاثر ہورہے ہیں ۔انہوں نے اس بات پر تشویش کا اظہار کیا کہ بد امنی اور بے چینی کی صورتحال میں کشمیری عوام کو جانی ومالی نقصان سے دو چار ہونا پڑتا ہے۔کانگریس لیڈر نے کہا کہ نامساعد حالات کے سبب شعبہ تعلیم،تجارت ،صنعت اور سیاحت بری طرح سے متاثر ہو تے ہیں اور جموں وکشمیر کو اقتصادی بد حالی کا سامنا رہتا ہے۔انہوں نے کہا کہ جب کبھی بھی ریاست مین غیر یقینی صورتحال پیدا ہوتی ہے ،تو ریاست کے تینوں خطوں کے تاجران متاثر ہوتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ سماج کا ہر ایک طبقہ بچوں کے مستقبل کو لیکر تشویش میں مبتلاءہے ،ایسے میں ہر ایک کو اپنا رول ادا کرنا چاہئے تاکہ بچوں کا مستقبل محفوظ رہنے کے ساتھ ساتھ امن کا قیام یقینی بن سکے ۔