۔15اپریل تک سول سکریٹریٹ میں سبھی محکموں کا ریکارڈ ڈیجیٹل کیا جائیگا

 سرینگر// حکومت کی کارکردگی اور اسکے اثر کو مزید بہتر بنانے کیلئے دربار مو کے مواقع پر سرینگر سے جموں اور جموں سے سرینگر کیلئے سرکاری فائلوں کو لانے اور لیجانے کے روایتی طریقہ کار سے چھٹکارا پانے کیلئے 15اپریل تک سبھی محکموں کی فائلوں کی ڈیجیٹلزیشن مکمل ہوجائے گی اور وہ کمپوٹرائزڈ کی جائیں گی۔ 15 اپریل 2021 سے مقررہ وقت پر ای منتقلی کے عمل کو مکمل کرنے کیلئے سبھی سرکاری محکموں کے ریکارڈ /فائلوں کو ڈیجیٹل کیا جائیگا البتہ جو سرکاری ریکارڈ اور سیکورٹی کے نکتہ نگاہ سے بہت اہم ہوگا انہیں روایت کے مطابق ہی سرینگر لیجایا جائیگا۔جی ڈی کے کمشنر سکریٹری منوج کمار دویدی کے ذریعہ جاری کردہ سرکیولرمیں کہاگیا ہے کہ اس طرح کی فائلوں کی مقدار کو تمام محکموں کے ذریعہ منظوری کے لئے عمومی انتظامی محکمہ کو 15 اپریل 2021 تک فراہم کیا جانا چاہئے ۔انہوں نے مزیدبتایا ’’ مختلف سرکاری محکموں کے تمام ریکارڈ اور فائلوں کو ڈیجیٹائزڈ کردیا گیا ہے سوائے کچھ حساس اور خفیہ فائلوں کے جنہیں سری نگر لے جانے کی ضرورت ہے‘‘۔ عموی انتظامی محکمہ کی جانب سے جاری کردہ ایک سرکیولرمیں ، تمام انتظامی سیکریٹریوں کو خفیہ اور حساس فائلوں ،یکارڈوں کی ایک فہرست مرتب کرنے کی ہدایت کی گئی ہے ، جس میں متعلقہ ماتحت اقدام دفتروں کی فائلیں بھی شامل ہیں ، جن کو اسکین نہیں کیا گیا ہے اور انہیں سری نگر لے جانے کی ضرورت ہے۔ ‘‘دربار کی منتقلی کے انتظامات کو حتمی شکل دیتے ہوئے حکام نے بتایا کہ یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ اس طرح کے حساس ریکارڈوں اور فائلوں کو سری نگر منتقل کرنے کے لئے صرف دس ٹرکوں کا انتظام کیا جائے گا۔ جموں کیلئے انتطامی سیکریٹریوں کو ہر محکمہ سے افرادی قوت اور ریکارڈ  مرتب کرنے والوں کا بھی انتظام رکھا گیا ہے۔جموں میں ہر محکمہ سے کچھ افرادی قوت / ریکارڈ رکھنے والوں کو برقرار رکھتے ہوئے فائلوںو ریکارڈوں کی بحالی اور بازیافت کے لئے سول سیکرٹریٹ جموں کے تمام انتظامی سیکرٹریوں کے ذریعہ بھی انتظامات کئے جائیں گے۔ ڈائریکٹر اسٹیٹس کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ مناسب اینٹی راڈنٹ، اینٹی ٹرمینیٹ اقدامات کے ساتھ جموں میں رکھی جانے والی فائلوں کی مناسب دیکھ بھال اور حفاظت کو یقینی بنائے گے۔ جموں میں دربار منتقلی کے دفتر 30 اپریل کو  بند ہوں گے اور یہ10 مئی 2021 کو سرینگر میں دوبارہ کھلیں گے۔