کوہلی نے بھیڑ پالن محکمے کی کارکردگی کا جائیزہ لیا

 جموں //پشو و بھیڑ پالن کے وزیر عبدالغنی کوہلی نے آج شیپ ہسبنڈری سیکٹر کو بڑھاوا دینے کیلئے جدید ٹیکنالوجی کے استعمال پر زور دیا تا کہ کسانوں کی سماجی و اقتصادی حالت بہتر بنائی جا سکے ۔ وزیر موصوف محکمہ کی کارکردگی کا جائیزہ لینے کے سلسلے میں منعقد کی گئی ایک افسروں کی میٹنگ کی صدارت کر رہے تھے ۔ میٹنگ میں کمشنر سیکرٹری انیمل /شیپ ہسبنڈری و ماہی پروری آر کے بھگت ، ڈائرکٹر شیپ ہسبنڈری ڈاکٹر سنجیو کمار ، ڈائریکٹر انیمل ہسبنڈری ڈاکٹر وکٹر کول کے علاوہ کئی اعلیٰ افسران بھی تھے ۔ میٹنگ میں مرکزی معاونت والی سکیموں جن میں آر کے وی وائی ، اے ایس سی اے ڈی ، این ایل ایم ، ای ایس وی ایچ ڈی ، آر آئی ڈی ایف اور اے ٹی ایم اے شامل ہیں کی عمل آوری پر تفصیلی بات چیت ہوئی ۔ وزیر نے متعلقہ حکام کو ہدایت دی کہ وہ اون اور دودھ کی پیداوار کے علاوہ اعلیٰ نسل کے جانور پیدا کرنے کے سلسلے میں خصوصی لایحہ عمل ترتیب دیں ۔ انہوں نے مویشیوں کی پیداوار کے عمل میں بہتری لانے پر بھی زور دیا ۔ کسانوں کو مختلف تکنیکوں کے بارے میں جانکاری فراہم کرنے پر زور دیتے ہوئے وزیر نے افسروں کو ہدایت دی کہ وہ کسانوں کیلئے خصوصی جانکاری کیمپ منعقد کریں تا کہ کسانوں کو محکمہ کی پالیسیوں اور سکیموں کے بارے میں علم حاصل ہو ۔ انہوں نے دیہی نوجوانوں پر زور دیا کہ وہ مرکزی معاونت والی سکیموں کے فوائد حاصل کریں جن کی بدولت بے روز گار نوجوانوں کو روز گار فراہم کرنے کے علاوہ انہیں اپنے یونٹ قایم کرنے کیلئے بھی امداد فراہم ہو گی ۔ اس سے قبل کوہلی نے عید الفطر کے مقدس موقعہ پر لوگوں کو معیاری گوشت اور پولٹری فراہم کرنے کے سلسلے میں کئے جا رہے انظامات کا جائیزہ لیا ۔