کورونا سے متاثر ہونے پر ایسا لگا جیسے دنیا رک گئی ہے :ٹم سیفرٹ

آکلینڈ 25 مئی (یواین آئی) آئی پی ایل کے دوران کورونا سے متاثر پائے گئے کولکاتا نائٹ رائیڈرز (کے کے آر) اورنیوزی لینڈ کے وکٹ کیپر بلے باز ٹم سیفرٹ نے جذباتی ہوتے ہوئے اپنا انفیکشن کے دوران کا تجربہ شیئرکیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جب انہیں کورونا ہواتو وہ ایسا محسوس کررہے تھے جیسے دنیا رک سی گئی ہو۔
کورونا سے ٹھیک ہوکر واپس وطن پہنچے سیفرٹ نے منگل کو میڈیا کے ساتھ بات چیت میں کہا، ‘‘جب ٹیم کے ایک افسرنے مجھے کورونا مثبت آنے کی اطلاع دی تومیں ٹوٹ ساگیا تھا۔ ابتدامیں مجھے تھوڑی سی کھانسی تھی۔ اس وقت مجھے لگاکہ یہ معمولی دمہ ہے ، لیکن رپورٹ آنے کے بعد سچ مچ میں میرادل ایک دم سے ٹوٹ گیا۔ میں اپنے کمرے میں گیا۔ مجھے لگاجیسے دنیا رک گئی ہے ۔ میں سچ میں سوچ نہیں پارہا تھا کہ آگے کیا ہوگا یہ سوچنا کافی خوفناک تھا۔ آس پاس بری خبریں آرہی تھیں اورمجھے لگا کہ میرے ساتھ بھی ایسا ہونے والا ہے ۔ آکسیجن کی کمی کے بارے میں خبریں آرہی تھیں۔ انہوں نے کہا، ‘‘کورونا کیا ہے ، اس کے بارے میں کچھ نہیں کہاجاسکتا۔ ہندوستان میں کئی کھلاڑیوں کو کورونا ہوا اور وہ اس سے ٹھیک ہوئے ۔ مجھے مسلسل ’آپ ٹھیک ہوجائیں گے ’ کہہ کر مثبت رہنے کے لئے کہا گیا، جس سے مجھے مدد ملی۔ بائیوببل میں اچھا اور محفوظ محسوس ہوا۔
سیفرٹ نے کہا کہ اس تجربہ کے بعد بھی وہ اکتوبر میں ٹی-20 عالمی کپ کے لئے ہندوستان آنا چاہیں گے ، حالانکہ اگر حالات میں بہتری نہیں ہوئی تو اس کا انعقاد یواے ای میں بھی ہوسکتا ہے ۔ قابل ذکر ہے کہ سیفرٹ گزشتہ ہفتے منفی آئے تھے ، اس لئے وہ نیوزی لینڈ واپس چلے گئے ہیں۔ فی الحال وہ آکلینڈ میں 14 روز کے لازمی کوارنٹین میں ہیں۔