کمسن غیرریاستی بچی نالہ پہروہندوارہ میں غرق

کپوارہ// ہندوارہ میں ایک غیر ریاستی کمسن بچی منگل کے روز نالہ پہرو میں غرقآب ہو گئی تاہم دو روز گزر جانے کے با وجود بھی اس کی لاش بر آمد نہ ہو سکی ۔اطلاعات کے مطابق اتر پردیش کے بجنورعلاقہ سے تعلق رکھنے والی 8سالہ حمیرہ دختر صابر احمد میدان چوگل ہندوارہ میں نالہ پہرو کے نزدیک منگل کے روز اپنی سہلیوں کے ساتھ کھیل رہی تھی کہ اس دوران اُس کا پیر پھسل گیا اور وہ نالہ پہرو میں غرقآب ہوئی ۔اُس کی سہیلیو ں نے جب یہ خبر مقامی لوگو ں کو بتا دی، وہ فوری طوروہا ں پہنچ گئے اور بچائو کاروائی شروع کی، تاہم کمسن حمیرہ کا کوئی اَتہ پتہ نہیں مل سکا، جس کے بعد شام دیر گئے انتظامیہ نے پولیس اور غوطہ خورو ں کی مدد حاصل کی اور کمسن کی لاش کو نکالنے کے لئے بڑے پیمانے پر تلاش شروع کی ۔منگل کو رات دیر گئے تک اگرچہ بچائو کاروائی جاری رہی تاہم رات کی تاریکی کی وجہ سے کاروائی روک دی گئی اور بدھ کی صبح کو حمیرہ کی لاش کو نکالنے کے لئے دوبارہ کارروائی شروع کی لیکن بدھ کی شام تک لاش دوروز کے بعد بھی بر آمد نہ ہو سکی ۔بتایا جاتا ہے کہ کمسن حمیرہ کا والد چوگل علاقہ میں حجامت کا کام کرتا ہے اور گزشتہ ایک سال سے یہاں پرہی مقیم ہیں ۔