پوری دنیا کی نگاہیں ہندوستان کی طرف ہیں: مودی

اوساکا//وزیر اعظم نریندر مودی نے عام انتخابات میں اپنی حکومت کے دوبارہ منتخب ہونے کو سچائی کی فتح قرار دیتے ہوئے کہا کہ آج دنیا ہندوستان کی طرف دیکھ رہی ہے اور یہاں موجو دامکانات کو ‘گیٹ وے ’ کی طور پر دیکھا جارہا ہے ۔یہا ں منعقد جی 20چوٹی کانفرنس میں حصہ لینے آئے مسٹر مویدی نے جمعرات کو ہندوستانی کمیونٹی سے خطاب کیا۔ مسٹر مودی کے خطاب کے دوران ‘مودی’ مودی اور جے شری رام کے نعرے گونجتے رہے ۔ جی 20چوٹی کانفرنس 29جون تک چلے گا اور اس دوران مسٹر مودی امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ’ روس کے صدر ولادیمیر پوتن’ چین کے صدر شی جن پنگ اور جاپان کے وزیر اعظم شنزو ابے کے علاوہ دنیا کے کئی دیگر رہنماوں سے ملاقات کریں گے ۔سترہویں لوک سبھاکے لئے ہوئے انتخابات کا ذکر کرتے ہو ئے مسٹر مودی نے اپنی حکومت کے دوبارہ منتخب ہونے کو سچائی کی جیت اور ووٹروں کا اس پردھان سیوک پر اعتماد قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ سال1971 کے بعد ملک کے عام انتخابات میں پہلی مرتبہ حکومت کو اقتدار کی حمایت میں مینڈیٹ ملا ہے ۔ ملک کے ووٹروں نے زبردست گرمی کے باوجود پولنگ میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا اور 61کروڑ ووٹروں نے اپنے حق رائے دہی کا استعمال کیا۔ چین کو چھوڑ دیا جائے تو دنیا کے کسی بھی ملک کی آبادی کے مقابلے ووٹ ڈالنے والوں کی تعداد زیادہ تھی۔مسٹر مودی نے کہا کہ الیکشن کی جیت میں یہاں موجود کئی لوگوں کا بھی رول ہے ۔ سات ماہ بعدایک بار پھر مجھے جاپان کی دھرتی پر آنے کا موقع ملا۔پچھلی مرتبہ جب وہ یہاں آئے تھے تب میرے دوست مسٹر ابے پر بھروسہ کرکے انہیں یہاں کامیاب بنایا گیا تھا۔ اس مرتبہ جب وہ یہاں آئے ہیں تو دنیا کی سب سے بڑی جمہویت ہندوستان نے اس پردھان سیوک کو پہلے سے زیادہ پیار دیا اور اعتماد کا اظہار کیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ 130کروڑ ہندوستانیوں نے پہلے سے بھی مضبوط حکومت اس مرتبہ بنائی ہے ۔ اسے بہت بڑا واقعہ قرا ردیتے ہوئے مسٹر مودی نے کہا کہ 30برسوں کے بعد ملک میں مسلسل دوسری مرتبہ مکمل اکثریت والی حکومت بنی ہے ۔ یہ سچائی اور جمہوریت کی جیت ہے ۔مسٹر مودی نے کہا کہ بابائے قوم مہاتما گاندھی نے جن تین بندروں کے ذریعہ برا مت دیکھو’ برا مت سنو’ برا مت کہو کا پیغام دیا تھا ان کا تعلق جاپان سے ہے ۔ دنیا کے ساتھ ہندوستان کے تعلقات بات جب آتی ہے تو جاپان کا اس میں ایک اہم مقام ہے ۔د ونوں ملکوں کے درمیان یہ تعلق آج کے نہیں ہیں بلکہ صدیوں پرانے ہیں۔ ان تعلقات کی بنیاد میں خیرسگالی اور ایک دوسرے کے کلچر اور ثقافت کے احترام ہے ۔مسٹر مودی نے کہا کہ جاپان کے دورے کے دوران انہوں نے یہاں ہندوستان کے تیئں پیا ر کو محسوس کیا۔وزیر اعظم ابے کے ساتھ جاپان کے کئی شہروں کا ذکر کرتے ہوئے مسٹر مودی نے کہا کہ پچھلے سال انہوں نے یاماناشی واقع اپنے گھر میں مجھے مدعو کیا تھا۔ جاپان کے وزیر اعظم ابے بھی ہندوستان میں میرے پارلیمانی حلقہ وارانسی کا دورہ کرچکے ہیں۔خیال رہے کہ حال ہی میں منعقد لوک سبھا انتخابات میں بی جے پی کو 303اور این ڈی اے کو 353 سیٹیں ملی ہیں۔یو این آئی