پنچایت چھجلہ لوہر میں بجلی محکمہ کا حال بے حال | کئی سپلائی لائنیں درختوں و لکڑی کے کھمبوں کیساتھ آویزاں

مینڈھر //مینڈھر سب ڈویژن کی سرحدی پنچایت چھجلہ لوہر میں محکمہ بجلی کی جانب سے ابھی تک پختہ کھمبے فراہم ہی نہیں کئے گئے ہیں جس کی وجہ سے اکثر گھروں میں بجلی کی سپلائی سبز درختوں اور لکڑی کے کھمبوں کی مدد سے کی جارہی ہے ۔مکینوں نے محکمہ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ بارشوں کے دوران گائوں کا بجلی نظام ہی متاثر ہوجاتا ہے جبکہ کئی ایک مقامات پر بجلی کا کرنٹ لگنے کا خطرہ رہتا ہے ۔مقامی سرپنچ محمد شفیع نے بتایا کہ پنچایت کے اکثر گھروں کو جارہی سپلائی لائنیں سبز درختوں کیساتھ باندھی گئی ہیں جبکہ کئی ایک جگہوں پر صارفین کے گھروں کی چھتوں پر لکڑی کے کھمبے نصب کئے گئے ہیں جس کی وجہ سے کبھی بھی کوئی بڑا حادثہ رونما ہو سکتا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ بجلی کی معقول فراہم کیلئے کھمبوں کی مانگ کو لے کر کئی مرتبہ وفود اعلیٰ حکام بالخصوص ضلع ترقیاتی کمشنر اور متعلقہ محکمہ کے اعلیٰ آفیسران سے ملاقی ہوئے ہیں لیکن ابھی تک گائوں کی عوام پسماندہ طرز کی زندگی بسر کرنے پر مجبور ہے جبکہ آفیسران کی جانب سے دی گئی یقین دہانیاں ابھی تک کھو کھلی ثابت ہوئی ہیں ۔مقامی صارفین نے الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ محکمہ بجلی کے ملازمین صرف گائوں میں بجلی کے بل تقسیم کرنے کیلئے آتے ہیں تاہم کھمبوں کی فراہم کی جانب کوئی دھیان ہی نہیں دے رہے ہیں ۔انہوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ پنچایت میں بجلی کی معیاری سپلائی کیلئے پختہ کھمبے فراہم کئے جائیں ۔