پنجاب کی جیلوں میں مقید 7نوجوانوں کے رشتہ داروں کا ترال میں احتجاج، رہائی ،ضروری سہولیات فراہم کرنے کا مطالبہ

ترال//پنجاپ اور چندی گڑھ کی جیلوںمیں مقید جنوبی ضلع پلوامہ کے اونتی پورہ،نور پورہ اورڈاڈسرہ وغیرہ علاقوں سے تعلق رکھنے والے7طالب علم گذشتہ 3سال سے قید و بند کی زندگیاں گزار رہے ہیں۔ پیر کو مذکورہ قیدیوں کے افراد خانہ اور قریبی رشتہ داروں نے
 ڈاڈسرہ ترال میں جمع ہو کر احتجاج کرتے ہوئے مذکورہ سبھی نوجوانوں کی فوری رہائی اور اُنہیں تمام قانونی سہولیات فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ۔
احتجاج میں شامل لوگوں نے بتایا کہ ان کے بچے بے گناہ ہیں اس لئے انہیں فوری رہاکیا جانا چاہئے۔قیدی نوجوانوں کے والدین نے بتایا کہ وہ ریاست پنجاب میں تعلیم حاصل کر رہے تھے جس دوران انہیں گرفتار کیا گیا اور آج تک انہیں رہا نہیں کیا گیا ہے۔انہوں نے الزام لگایا کہ گزشتہ کئی ہفتوں سے ان کے بچے جیل میں تمام سہولیات سے محروم ہیں جس کی وجہ سے اُن کی زندگیاں خطرے میں پڑ گئی ہیں۔انہوں نے پنجاب حکومت اور مودی سرکار سے ان بچوں کی رہائی کا مطالبہ کیا ۔