نیشنل کانفرنس اسمبلی انتخابات میں حصہ لے گی

سرینگر// نیشنل کانفرنس صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہا ہے کہ ان کی پارٹی اسمبلی انتخابات میں شرکت کرے گی لیکن مرکز کو انتخابات کا اعلان کرنے سے پہلے جموں کشمیر کاریاستی درجہ بحال کرنا ہوگا۔نگین میں شیخ محمد عبداللہ کی 39ویں برسی کے موقع پر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر فاروق نے کہا’’مجھے معلوم نہیں کہ انتخابات کب ہوں گے،تاہم جب بھی ان کا انعقاد ہوگا ، ہم پیچھے نہیں رہیںگے، بلکہ حصہ لیں گے اور جیت بھی لیں گے‘‘۔ان کا کہنا تھا کہ انتخابات کے انعقاد سے پہلے مرکز کو ریاست کا درجہ بحال کرنا ہوگا۔ این سی سربراہ نے کہا کہ ان کی پارٹی ریاستی درجے کی بحالی اور آئین ہند کے دفعہ 370 کیلئے لڑنے کیلئے پرعزم ہے۔انہوں نے کہا ’’ ہمارے موقف میں کوئی تبدیلی نہیں ہے، ہم لڑ رہے ہیں اور لڑتے رہیں گے‘‘۔ ڈاکٹر فاروق نے اپنے والد کاذکرکرتے ہوئے کہاکہ شیخ محمد عبداللہ نے پوری زندگی اس قوم کی بہتری کیلئے وقف کر دی اور اُمید ہے کہ یہ پارٹی (این سی) کوشش جاری رکھے گی اور لوگوں کی بھلائی کرتی رہے گی۔ڈاکٹرفاروق نے کہاکہ ان دنوں ، پارٹی انتخابات ہو رہے ہیں اور میں مبصرین اور اس عمل سے منسلک دیگر تمام لوگوں کو مبارکباد دیتا ہوں۔ان کا کہنا تھا اس طرح کی مشق پارٹی کو زندہ رکھتی ہے اور صفوں میں زندہ دلی لاتی ہے۔ اچھے لوگ بھی سامنے آتے ہیں۔ طالبان کے قبضے کے بارے میں ، نیشنل کانفرنس صدر نے کہا کہ طالبان کو افغانستان میں انسانی حقوق کا تحفظ کرنا چاہیے۔ ڈاکٹر فاروق نے کہا’’انہیں روحانی طور پر اسلامی اصولوں پر عمل کرنا چاہیے اور باقی دنیا کے ساتھ اچھے تعلقات استوار کرنے چاہئیں‘‘۔اس سے قبل ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے اپنے کارکنوں سمیت مرحوم شیخ محمد عبداللہ کی قبر پر حاضری دی اور سابق وزیر اعلیٰ کی فاتحہ خوانی کی۔ درگاہ میں سپر د خاک مرحوم شیخ محمد عبداللہ کی برسی پر نیشنل کانفرنس نے فاتحہ خوانی کی تقریب کا انعقاد کیا تھا،جس میں پارٹی کے سنیئر لیڈراں اور کارکنوں نے شرکت کرتے ہوئے مرحوم کے حق میں فاتحہ خوانی کی۔