میگا کسان میلہ2019،صوبائی کمشنر نے افتتاح کیا

سرینگر//صوبائی کمشنر کشمیر بصیرا حمد خان نے کہا ہے کہ زراعت،باغبانی اور سیاحتی شعبے ریاست کی اقتصادیات کے لئے ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتے ہیں۔انہوںنے کہا کہ کشمیری زعفران اوردیگر جڑی بوٹی مسالے پوری دُنیا میں مشہور ہیںاورسرکار وادی میں میں اس کی کاشت کے لئے مزید اقدامات کررہی ہے تاکہ وادی میں اس کے کاروبار کومزید بڑھاوا دیا جاسکے، جس پر وادی انحصار کرسکتی ہے۔صوبائی کمشنر نے ان باتوں کا اظہار زرعی کمپلیکس لال منڈی کے احاطے میں کسان میلے 2019ء کا افتتاح کرنے کے موقعہ پر کیا جس کا اہتمام محکمہ زراعت نے آتما سکیم کے تحت کیا۔کسان میلے کے انعقاد کا مقصد کسانوں کو مختلف زرعی سکیموں اور مرکزی معاونت والی سکیموں کے بارے میں جانکاری فراہم کرنا تھا۔اس موقعہ پر صوبائی کمشنر نے کسانوں کے ایک بڑے اجتماع سے خطاب کیا۔تقریب سے خطاب کے دوران الطاف اعجاز اندرابی نے کہا کہ مخصوص جگہوں پر خاص قسم کی فصلوں کی پیداوار کو یقینی بنانے کی ضرورت ہے تاکہ زرعی فصلوں کا کاروبار مزید منافع بخش بن سکے۔انہوںنے مزید کہا کہ کشمیر میں چاول اور سبزیوں کی کاشت کی کافی گنجائش موجود ہے جن کی پیداوار اورمارکیٹنگ کے لئے مزید اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔اس موقعہ پر صوبائی کمشنر نے ترقی پسند کسانوں میں آتمام سکیم کے تحت10ہزار روپے فی کس انعامات بھی تقسیم کئے۔