مینڈھر ہسپتال میں اینس تھیزیا ماہرکی آسامی خالی | ڈاکٹر مریضوں کو ریفر کرنے پر مجبور ،انتظامیہ خاموش

مینڈھر //سب ضلع ہسپتال مینڈھر میں انتظامیہ کی جانب سے ابھی تک اینستھیزیاکا ماہر ڈاکٹر تعینات ہی نہیں کیا گیا ہے جس کی وجہ سے ڈاکٹر معمولی اپریشن کیلئے بھی مریضوں کو دیگر ہسپتالوں میں علاج معالجے کیلئے ریفر کرنے پر مجبور ہو گئے ہیں ۔مینڈھر کی عوام نے انتظامیہ اور متعلقہ محکمہ کے اعلیٰ آفیسران کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ گزشتہ کئی برسوں سے اینستھیزیاماہر کی آسامی خالی پڑی ہوئی ہے جبکہ اس پر ملازم کی تعیناتی کیلئے اعلیٰ حکام سے بھی رجوع کیا گیا لیکن متعدد یقین دہانیوں کے بعد بھی تعیناتی عمل میں نہیں لائی گئی ۔انہوں نے کہاکہ ہسپتال میں سرجن ڈاکٹر کی تعیناتی عمل میں لائی گئی ہے لیکن معمولی اپریشن کیلئے بھی مریضوں کو بیہوش کرنے کیلئے ڈاکٹر نہ ہونے کی وجہ سے سرجن ہمیشہ مریضوں کو گورنمنٹ میڈیکل کالج راجوری ،ضلع ہسپتال پونچھ و دیگر ہسپتالوں میں ریفر کرنے پر مجبور ہے ۔عوام نے کہاکہ انتظامیہ کی جانب سے اینستھیزیاماہر کو گزشتہ چار برسوں سے کسی دوسرے ہسپتال میں اٹیچ کیا گیا ہے تاہم مینڈھر میں خالی پڑی ہوئی اسامی کو ابھی تک پُر نہیں کیا گیا ہے ۔غور طلب ہے کہ سب ضلع ہسپتال مینڈھر سب ڈویژن میں مریضوں کیلئے ایک واحد بڑا ہسپتال قائم کیا گیا ہے تاہم اس میں بنیادی سہولیات کا اکثر فقدان رہتا ہے ۔مکینوں نے انتظامیہ سے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ بہتر سہولیات فراہم کرنے کیلئے ہسپتال میں اینستھیزیا ماہر کی تعیناتی عمل میں لائی جائے ۔