مودی ٹیلی ویژن کا لیڈر:آزاد

جموں //سینئر کانگریس رہنما و سابق وزیر اعلیٰ غلام نبی آزا دنے وزیر اعظم نریندر مودی کو ٹیلی ویژن کا لیڈر قرا ردیتے ہوئے کہاہے کہ بی جے پی اقتدار کیلئے ملک کو فرقہ وارانہ خطو ط پر تقسیم کررہی ہے ۔جموں کے چوہادی علاقے میں ایک انتخابی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے آزاد نے کہاکہ بھاجپا کو ملکی عوام کی ترقی اورخوشحالی کی نہیں بلکہ اپنے اقتدار کی فکر ہے اوروہ نفرت اور تقسیم کی سیاست سے یہ مقصد حاصل کرناچاہتی ہے ۔انہوںنے کہاکہ کانگریس کیلئے پہلے ملک اور بعد میں پارٹی ہے اور پارٹی نے کبھی بھی وہ کام نہیں کیا جو عوام کے مفادات کے منافی ہو ۔انہوںنے عوام سے اپیل کی کہ وہ بھاجپا کے فرقہ پرست ایجنڈا کو ناکام بنائیں اور بقائے باہم کی روایت کر برقرار رکھیں ۔آزاد نے کہاکہ لوک سبھا انتخابات کے بعد کانگریس کی قیادت والی حکومت برسراقتدار آئے گی اور انہیں یقین ہے کہ رمن بھلہ جموں پونچھ نشست سے واضح اکثریت سے کامیابی حاصل کریں گے ۔کانگریس رہنما نے کہاکہ ملک کے لوگ جمہوریت، عزت ووقار اور آئین پر یقین رکھتے ہیں لیکن ہمارے وزیر اعظم اس پر عمل پیرا نہیں ۔ان کاکہناتھا’’ہمارا ملک خطرے میں ہے کیونکہ مودی حکومت آئین کے خلاف کام کررہی ہے اور وہ سیاسی مخالفین کو دبارہی ہے جو ماضی میں اٹل بہاری واجپائی کی قیادت میں قائم ہونے والی بھاجپا حکومت میں نہیں دیکھاگیااور واجپائی ہمیشہ صحت مند اپوزیشن کی وکالت کرتے تھے ‘‘۔انہوںنے کہاکہ بھاجپا نے 2014کے انتخاب میں بھی لوگوںکو مذہب اور ذات پات کے نام پر تقسیم کیا اور ہندو و مسلم کے درمیان خلیج پیدا کی ۔انہوںنے کہاکہ اس مرتبہ پھر سے یہ جماعت اسی حکمت عملی کو دہراناچاہتی ہے اور ترقی کے بجائے تقسیم سے ووٹ چاہتی ہے ۔