معالج کا مشورہ| ’علاج سے بہتر پرہیز‘ سربراہ میڈیسن جی ایم سی جموں

 جموں// سربراہ میڈیسن گورنمنٹ میڈیکل کالج اور ہسپتال ڈاکٹر وِجے کنڈل نے کہا ہے ، ’’مشعول کہاوت ہے کہ ’علاج سے بہتر پرہیز ہے‘کووِڈ۔ 19 انفیکشن کے ساتھ سب سے زیادہ مطابقت رکھتا ہے کیونکہ اس کے خلاف کوئی بہتر تحفظ نہیں ہے۔‘‘اُنہوں نے وضاحت کی کہ اِس میں ماسک پہننا ، ہاتھ بار باردھونا اور سماجی فاصلہ برقرار رکھنا اور بھیڑبھاڑ مقامات سے پرہیز کرنا شامل ہے۔ ڈاکٹر نے حکومت کی ہدایات کا اعادہ کیا کہ صرف ضرورت پڑنے پر ہی باہر جائیں۔ خود حفظان صحت ، ماسک پہنیں اور اجتماعات سے گریز کریں۔ اُنہوں نے لوگوں سے یہ درخواست کی کہ وہ دوسرے لوگوں کو معاشرتی دوری سکھائیں۔ انہوں نے کہا کہ بروقت ویکسین لگانا وائرس کے خلاف بہت بڑا دفاع ہے۔ ڈاکٹر کنڈل نے کہا کہ کووِڈمریض زیادہ ترآسانی سے صحتیاب ہوجاتے ہیں۔اگر کسی کی آکسیجن سچیوریشن  سطح 94 فیصد سے نیچے آ جاتی ہے تو مریض کو چاہئے کہ وہ ڈاکٹر سے رجوع کرے۔ محکمہ کے سربراہ نے ڈاکٹر کے نسخے کے بغیر خود اَدویات ، اینٹی آوگولنٹ اور سٹیرائیڈس کے استعمال کرنے سے انتباہ کیا اور کہا کہ سٹیرائیڈز ’’دو دھاری تلواری‘‘ ہیں۔ ڈاکٹر کنڈل نے کہا کہ ایک طرف وہ کووِڈمریضوں کی مدد کرتے ہیں اور دوسری طرف وہ کسی کی استثنیٰ کو کمزور کرسکتے ہیں۔ڈاکٹر کنڈل نے6 منٹ واک ٹیسٹ کرنے کی صلاح دی ۔یہ ایک ابتدائی مشق ہے کہ آیا کسی کو طبی مدد کی ضرورت ہے یا نہیں۔اِس 6منٹ واکٹ ٹیسٹ پتہ چلتا ہے کہ اگر اس کا آکسیجن سچیوریشن تین فیصد یا اس سے 94فیصد سے نیچے آجاتا ہے تو اَب ڈاکٹر سے مشورہ کرنے کا وقت آگیا ہے۔ایسے مریضوں کو آکسیجن کی سطح بحال کرنے کی کوشش کرنی چاہئے ۔کسی بھی صورت میں اگر کووِڈعلامات چار سے پانچ دن کے بعد بھی برقرار رہتے ہیں تو کسی کو فوری طور پر طبی مدد لینا چاہئے۔عوام الناس کو بتایا جاتا ہے کہ کووِڈ سے متعلق تمام سوالات اور شکوک و شبہات کو ہیلپ لائن نمبر0191 2571616 پر رابطہ کیا جاسکتا ہے۔ عوام 0191-2520982, 2549676, 2674444, 2674115, 2674908پر بھی صوبائی کنٹرول روم کال کرسکتے ہیں۔ مزید برآں جموں و کشمیر حکومت نے براہ راست ہیلتھ پروگرام شروع کیا ہے۔یہ گلستان چینل پر فون اِن ہیلتھ پروگرام روزانہ صبح ساڑھے آٹھ بجے سے نو بجے اور شام ساڑھے آٹھ بجے سے نو بجے دو بار نشر کیا جاتا ہے۔