مزید خبریں

مینڈھر میں یک روزہ اصلاحی و روحانی اجلاس | وراثت میں بہنوں،بیٹوں کو حصہ نہ دینا بڑا گناہ:مولانا محمد فاروق مدنی

جاوید اقبال
مینڈھر//دارالعلوم جامعہ محمودیہ قاسم نگر مینڈھر میں یک روزہ سالانہ اصلاحی روحانی اجلا س عام منعقد ہوا جس میںمولانا محمد فاروق ،مدنی فاضل مدینہ یونیورسٹی استاد تفسیر وحدیث جامعہ اشاعت العلوم اکل کوا مہاراشٹر بطور مہمان خصوصی شامل ہوئے ۔اجلاس عام سے قبل 2اپریل کو بعد نماز مغرب مولانا نے درس حدیث دیا اپنے  درس میں مولانا مدنی نے باہم اتحاد و اتفاق اور محبت الفت کے ساتھ رہنے کا حکم دیا۔ انہوں نے کہا کہ مسلمان نفع متعدی یعنی دوسروں کو نفع پہنچانے کیلئے دینا میں بھیجا گیا ہے اگر ہم یہ چاہتے ہیں کہ مرنے کے بعد بھی ہمارے نقوش تابندہ رہیں تو اللہ کی پیدا کی ہوئی مخلوق کیلئے جینا شروع کیا جائے ۔اس درس میں ضلع بھر سے ایک بڑی تعداد میں آنے والے علماء کرام کو مخاطب کرتے ہوئے مولانا مدنی نے کہا کہ امت مسلمہ اور عوام تک قرآن کریم کی بنیادی تعلیمات اور خاص کر عقائد کی واضح آیات و تفاسیر پہنچائے پیارے نبی حضرت محمد ؐکی سنتوں کو عام کریں بدعات خرافات رسومات خود بخود سنت کے نور سے ختم ہو جائیں گی۔  مولانا مدنی کا روح پرور علمی و اصلاحی خطاب ہواجس کے دوران مختلف امور کی وضاحت کرتے ہوئے مولانا مدنی نے پر زور الفاظ میں معاشرے میں عورتوں پر ہونے والے ظلم و ستم کی دردناک داستان سناکر مجمع کو اشک بار کردیا۔ مولانا نے نے شاہ عبدالعزیز ؒکے حوالے سے کہا اگر بچی کی صلاحیت قابلیت کو کچل دیا گیا اس کو اپنی صلاحیتوں کو اجاگر کرنے کا موقعہ نہیں دیا گیا تو قیامت میں اس کے والدین،وبھائیوں سے اس سلسلے میں سخت پوچھ تاچھ ہوگی بچیوں کو دینی و دینیاوی تعلیم پڑھاؤ انکے اخلاق کو درست کرو اگر عورت سدھر جاتی ہے تو خاندان سدھر جاتاہے۔انہوںنے کہاکہ عورتوں کادل کافی نرم ہوتاہے انکی بددعاؤں سے بچو کمزوروں،بیویوں،بچیوں،یتیموں،اور بہنوں پر ظلم کرنے سے بچو۔مولان مدنی نے مزید کہا کہ عورتوں پر ایک بہت بڑا ظلم یہ ہورہاہے کہ ان کو وراثت سے محروم رکھا جارہاہے والد کی وراثت میں جیسے بیٹوں کا حق ہے ویسے ہی بیٹیوں کا بھی حق ہے لہذا بہنوں کو میراث دیں اگر بہنوں بیٹیوں کو شادی کے موقعے پر کچھ بھی ہدیہ نہ دیا جائے گا تو کوئی حرج نہیں لیکن اگر وراثت میں ان کو ان کا حصہ نہیں دیا جائے گا تو یہ بہت بڑا ناقابل معافی جرم ہے ۔صدر اجلاس حضرت مولانا فتح محمد بانی و مہتمم دارالعلوم محمودیہ قاسم نگر مینڈھر و سینئر نائب صدر تنظیم علمائے اہلسنت والجماعت ضلع پونچھ نے حاضرین کو مخاطب بناکر کہا کہ آج کے اس اجلاس کا یہی پیغام ہے کہ عورتوں کو انکے حقوق دو وراثت میں انکو انکا حصہ دو پختہ عزم کرکے اٹھیں کہ ہم ان باتوں پر عمل کریں گے اور دوسروں تک بھی پہنچائیں گے پھر مولانا مدنی کے ہاتھوں آٹھ خوش نصیب حفاظ کرام کی دستار بندی کی گئی۔
 
 

بھاجپا وفد کی ڈی سی سے ملا قات 

جاوید اقبال 
مینڈھر //بھاجپا سنیئر لیڈرذوالفقار پٹھان کی قیادت میں ایک وفد نے ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ اندر جیت اور ایس ایس پی پونچھ سے ملا قات کرتے ہوئے ضلع بالخصوص تحصیل بالا کوٹ کی عوام کو درپیش مسائل کے سلسلہ میں جانکاری فراہم کی ۔بھاجپا لیڈر نے کہاکہ تحصیل بالا کوٹ کے اکثر دیہات فائرنگ کی وجہ سے متاثر رہتے ہیں جس کی وجہ سے سرحدی گائوں میں بجلی ،پانی کے شدید قلت کیساتھ ساتھ سڑکیں بھی خستہ حال ہو گئی ہیں ۔انہوں نے دنوں آفیسران کا استقبال کرتے ہوئے امید ظاہر کی کہ ان کے دور میں بالاکوٹ کی عوام کو سہولیات میسر ہونگی ۔
 

بہروٹ میں شجرکاری مہم کا آغاز 

  عظمیٰ یاسمین
 تھنہ منڈی //ڈپٹی کمشنر راجوری راجیش کمار شاون اور ڈائریکٹر ہارٹیکلچر رام سیوک کے ہاتھوں تھنہ منڈی کے بہروٹ علاقہ میں اعلی معیارکے سیبوں کی شجرکاری مہم کا آغاز کیا گیا ۔اس موقع پر ڈائریکٹر محکمہ باغبانی نے اس شعبہ سے وابستہ کئی کسانوں سے ملاقات کی اور اس سکیم کی وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ اس سکیم کے تحت پورے خطہ کو ثمر آور شجرکاری کے زمرے میں لایا جائے گا اور مستقبل قریب میں معیاری سیب کے پیداواری شعبوں پر زیادہ توجہ دے کر کے ترقیاتی منصوبے مرتب کئے جائیں گے۔متعلقہ آفسران نے ہدایت کی کہ جامع حکمت عملی کے تحت ترقیاتی پروگرام تشکیل دئیے جائیں تاکہ عوام اس طرح کے منصوبوں سے مستفید ہو۔ انہوں نے کہا کہ ہائی ڈینسٹی ایپل پلانٹ کا آغاز بہروٹ سے کیا گیا ہے البتہ عوامی مطالبات کے پیش نظر پورے علاقے کو اس زمرے میں لایا جائے گا۔متعلقہ آفیسران نے یہ بھی کہا کہ جو لوگ پلانٹ کاسٹ جمع کرسکتے ہوں وہ ضروری کاغذات جمع کروا کر اس سکیم سے فائدہ اٹھا سکتے ہیں۔ آخر میں پی ڈی پی کے سینئر لیڈر انجم جاوید میرزا نے آفیسران کا شکریہ ادا کیا کہ انہوں نے ہارٹیکلچر ڈیپارٹمنٹ کی سکیم کی وضاحت کی۔اس موقع پر محکمہ ہارٹیکلچر کے ملازمین، علاقہ کے پنچوں اور سرپنچوں کے علاوہ لوگوں کی ایک بڑی تعداد موجود تھی۔
 

تھنہ منڈی کالج میں پروگرام کا انعقاد 

عظمیٰ یاسمین 
تھنہ منڈی // "آزادی کا امرت مہا اتسو" کے تحت ریاستی اور صوبائی سطح پر مختلف پروگراموں کا انعقاد کیا جارہا ہے۔اس سلسلہ میں گورنمنٹ ڈگری کالج تھنہ منڈی میں بھی ایک پروگرام کا انعقاد کیا گیا۔ یاد رہے کہ ملک کی آزادی کے 75 برس مکمل ہونے پر آئندہ 75 ہفتوں میں کئی پروگرام منعقد کئے جائیں گے۔ یو ٹی جموں کشمیر میں بھی انتظامیہ امسال ملک کی آزادی کے 75 سال مکمل ہونے پر پہلی مرتبہ بڑے پیمانے پر جشن آزادی کا اہتمام کر رہی ہے یہ تقریبات 15 اگست 2022 کو اختتام پذیر ہوں گی۔ اسی سلسلے کا پہلا اور نہایت ہی شاندار پروگرام گورنمنٹ ڈگری کالج تھنہ منڈی میں بھی منایا گیا جس کی صدارت کالج کے پرنسپل پروفیسر ڈاکٹر جاوید احمد قاضی نے کی یہ پروگرام ہندوستان @ 75 کے پہلے مرحلہ کے موقع پر ادبی اور ثقافتی سرگرمیوں کی کنوینئر پروفیسر راحیلہ مشتاق کی سرپرستی میں تیار کیا گیا جو نہایت ہی اہم اور مؤثر رہا۔اس موقع پر پروفیسر قمر ربانی ڈیپارٹمنٹ آف ہسٹری گورنمنٹ پی جی کالج راجوری نے طلباء کو ملک میں مختلف ثقافتوں اور روایات کی ابتدا اور قیام کی پوری وضاحت دی ۔پروفیسر موصوف نے طلباء پر مختلف مذاہب اور ثقافت کی سالمیت کو برقرار رکھنے پر بھی زور دیا۔کالج کے پرنسپل پروفیسر ڈاکٹر جاوید احمد قاضی نے کالج کی ثقافتی اور ادبی کمیٹی کو دلی مبارکباد پیش کی۔ پرنسپل نے کہا کہ تاریخی اور ثقافتی اہمیت کی حامل یہ تقریبات پندرہ اگست 2022 تک جاری رہیں گی جن میں قومی ترانے، ثقافتی پروگرام، سکٹ اور قومی پرچم لہرانے وغیرہ تقریبات منعقد ہوں گی لہذا تمام طلباء ان تقاریب میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں۔
 

ماسک استعمال نہ کرنے پر جرمانہ عائد 

راجوری //ضلع راجوری میں عوامی مقامات پرماسک کا استعمال نہ کرنے پر جموں وکشمیر پولیس نے کئی افراد پر جرمانہ عائد کیا ۔اس سلسلہ میںپولیس نے مختلف مقامات پرناکے لگا کر ماسک و دیگر کووڈ ایس او پیز کا معائینہ کیا ۔پولیس نے بتایا کہ ضلع کے تھنہ منڈی علاقہ میں ماسک کا استعمال نہ کرنے پر پولیس کی جانب سے 12100روپے جرمانہ بھی کیا گیا ۔اسی طرح ضلع ہیڈ کوارٹر اور تحصیل منجا کوٹ میں بھی کارروائی عمل میں لائی گئی ۔
 

راجوری میں اسلامک ویلفیئر آرگنائزیشن لنچ 

راجوری //راجوری ضلع میں انسانیت کی خدمت کرنے کیلئے ’اسلامک ویلفیئر آر گنائزیشن لنچ کی گئی ۔اس تنظیم میں علماء ،ضلع کے معززین ،نوجوان رضاکار ،ڈی ڈی سی ،میونسپل ممبران اور پنچایت اراکین نے اس سلسلہ میں منعقدہ اجلاس میں شرکت کر کے اپنی حمایت کی یقین دہانی کروائی ۔اس سلسلہ میں منعقدہ ایک پریس کانفرنس میں اراکین نے متفقہ طور پر شفاقت میر کو تنظیم کا صدر منتخب کیا گیا ۔مولانا فاروق نعیمی کی قیادت میں منعقدہ اجلاس کے دوران تنظیم کے اراکین نے عوام کو یقین دلاتے ہوئے کہاکہ ان کی امنگوں کے مطابق بغیر کسی مذہب وملت کام کیا جائے گا ۔تنظیم کے منتخب صدر نے اراکین و معززین کا شکریہ ادا کیا ۔انہوں نے لوگوں سے اپیل کرتے ہوئے کہاکہ وہ اس تنظیم کو معنی خیز بنانے کیلئے وہ اپنا رول ادا کریں ۔
 
 

ملت کا دردمند اور بے باک قائد جوار رحمت میں | مولانا سید ولی رحمانی کی خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائیگا :مولانا غلام قادر 

پونچھ//عالمگیر شہرت کی حامل بلند قامت علمی شخصیت آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کے جنرل سیکریٹری و جامعہ مونگیر کے مولانا سید ولی رحمانی کے سانحہ وفات پر جامعہ ضیا ء العلوم پونچھ کے بانی و مہتمم و ممبر کل ہند مسلم پرسنل لاء بورڈ مولانا غلام قادرنے گہرے رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے اسے ناقابل تلافی ملی خسارہ قرار دیا۔ مولانا نے کہا کہ مولانا مرحوم ایسے وقت میں قوم کو تنہا چھوڑ گئے جب پوری قوم کو مولانا کی خداداد صلاحیتوں کی اشد ضرورت تھی۔ مولانا ولی رحمانی جو امیر شریعت مولا نا منت اللہ رحمانی کے صاحبزادے اور بانی ندو العلما مولانا سید علی مونگیری کے پوتے تھے ایسے عالی نسب عالم دین کا سانحہ ارتحال یقینا ایک عظیم حادثہ ہے۔ مولانا غلام قادر نے اپنے تعزیتی پیغام میں مولانا کی قومی ملی دینی سماجی سیاسی خدمات کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستانی مسلمانوں کا سب سے مؤقر پلیٹ فارم آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ آج ادھورہ رہ گیا کہ جس کے پلیٹ فارم پر مولانا اپنے قائدانہ جوہر بکھیرتے تھے اور بے باکی کیساتھ کھل کر ملی مسائل پر بات کرتے تھے۔انہوں نے کہاکہ مولانا جہاں علم و عمل کے میدان کے مرد مجاہد تھے وہاں میدان سیاست و قیادت میں بھی مولانا اپنی مثال آپ تھے اپنی بیشمار تعلیمی و سماجی ذمہ داریوں کے باوجود مولانا نیملی و سیاسی معاملات میں مسلمانان ہند کی مخلصانہ اور سنجیدہ راہنمائی کی اور کبھی بھی اپنی جرات و ہمت کو پس پشت نہیں ڈالا۔ انہوں نے کہاکہ مرحوم نے متعدد کتابیں بھی تصنیف کیں اور متعدد دینی ادارے بھی قائم کئے۔ اس کے علاوہ رحمانی فاؤنڈیشن کے زیر اہتمام فلاحی خدمات کو بھی بڑے پیمانے پر انجام دیا سیاسی میدان میں مولانا سالہا سال تک بہار اسمبلی کے رکن رہے اور دو مرتبہ ڈپٹی چیر مین بھی منتخب ہوئے اپنی طویل اور شاندار ملی خدمات سے مولانا نے جو تاریخ رقم کی ہے اسے دیر تک یاد رکھا جائیگا۔ مولانا نے مولانا مرحوم کے اہل خانہ کیساتھ اظہار تعزیت کرنے کے علاوہ ملک بھر میں پھیلے مولانا کے محبیین و متعلقین کیساتھ اظہار تعزیت کی ہے جامعہ ضیا ء￿ العلوم پونچھ میں مولانا مرحوم کیلئے دعاؤں کا سلسلہ جاری ہے ۔
 
 
 
 

فوج کا عوامی بیداری پروگرام

حسین محتشم

پونچھ// فوج کی جانب سے کرشن چندر پارک پونچھ میں کرونا وائرس کی دوسری لہر کے دوران لوگوں کو خود کو محفوظ رکھنے اور ان میں بیداری لانے کے سلسلہ میں ایک پروگرام کا اہتمام کیا گیا جس میں ڈگری کالج پونچھ کے اساتذہ، طلبہ و طالبات کے علاوہ عام لوگوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔اس دوران سرحدی گائوں سلوتری کے نجی اور سرکاری اسکولوں کے طلبہ و طالبات کی جانب سے نکڑ ناٹک کے ذریعہ عوام کو کرونا وائرس سے محفوظ رہنے کے سلسلہ میں احتیاتی تدابیر پر عمل کرنے پر زور دیا گیا۔بچوں کی جانب سے کئے گئے نکڑ ناٹک میں لوگوں سے اپیل کی گئی کہ وہ سماجی دوری  بنائے رکھیں ، جہاں بھی جائیں ماسک پہن کر رکھیں ،بار بار ہاتھ دھوتے رہیں 
یا پھر ہینڈ سنیٹائزر کا استعمال کریں۔فوج کی جانب سے اس دوران طلبہ و طالبات، اساتذہ اور عام شہریوں کے لئے کھانے پینے کا انتظام بھی کیا گیا تھا۔
 
 

خودکشی کرنے والے شخص کی لعش 6 دن بعد مل گئی

حسین محتشم

پونچھ//ضلع پونچھ کے سیڑھی چوہانہ گائوں کا شخص جس نے دریا میں کود کر خودکشی کر لی تھی کی لعش چھ دن بعد کھنیتر گائوں میں دریا سے نکال لی گئی۔ ضلع پولیس پونچھ ، این ڈی آر ایف کے رضاکاروں اور گائوں کے تیراکوں اورمقامی افراد کی جانب سے لعش کو تلاش کرنے کا سلسلہ جو کہ چھ روزتک جاری رہا آخر کار لعش کھنیتر گائوں میںدریا سے نکال لی گئی۔سیڑھی چوہانہ کے محمد رفیق کی لاش برآمد کرنے کے بعد پولیس نے لاش کو ضلع ہسپتال پونچھ منتقل کیا جہاں پر اس کا پوسٹ مارٹم کیا گیا جبکہ دیگر قانونی لورزامات مکمل کرنے کے بعد لاش کو لواحقین کے حوالے کر دیا گیا ۔
 
 

بھاجپا ریاستی صدر اور ممبر پارلیمنٹ کا پونچھ دورہ 

حصین محتشم
پونچھ//بھارتیہ جنتا پارٹی کے ریاستی صدر رویندر رینہ اور ممبرپارلیمنٹ جموں پونچھ یوگل کشور شرما اور دیگر لیڈران نے سنیچر وارکو پونچھ کا دورہ کیا ۔اس دورہ کے دوران انہوں نے پارٹی کارکنان اور لیڈران سے ملاقات کی جب کہ پارٹی کے ضلع دفتر میں ایک اجلاس بھی منعقد کیاگیا جہاں پارٹی کارکنان سے تبادلہ خیال کیا گیا۔اس دورا حال ہی میں پی ڈی پی کو خیر آباد کہہ کر بی جے پی میں شامل ہوئے گردیپ سنگھ صراف کی جانب سے ان کے ذاتی پیٹرول پمپ پر ایک پروگرام منعقد کیا گیا جس میں مقامی اور ریاستی لیڈران کے علاوہ عوام کی بھاری تعداد میں عوام موجود تھے۔ اس دوران اعوان بالا میں بیٹھے ہوئے لیڈران نے اور کارکنان نے کوڈ 19کے چلتے احتیاطی تدابیر کاخیال نہ رکھتے ہوئے محکمہ صحت کی جانب سے جاری کردہ ہدایات کی خلاف ورزی کی۔ اس موقع پر موجود لوگوں نے کشمیر عظمیٰ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ایک طرف  پونچھ میں عوام کو سختی سے ماسک پہننے کی اور سماجی دوری بنائے رکھنے کی ہدایات دی جارہی ہے تو دوسری جانب ملک کے اہم عہدوں پر فائز لیڈران خود کی ہدایات کی خلاف ورزی کر رہے ہیں۔مکینوں نے بھاجپا لیڈران کیخلاف کارروائی کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہاکہ کووڈ ایس او پی کی خلاف ورزی کرنے کا سنجیدہ نوٹس لیا جائے ۔