مدرسہ جامعہ محمدیہ گمب دچھن میں9حافظوںکی دستاربندی کی گئی

 عاصف بٹ

کشتواڑ //ضلع کشتواڑ کے دورافتادہ علاقہ دچھن میں قائم مدرسہ جامعہ محمدیہ گمب اعظیم الشان جلسہ دستاربندی کا اجلاس منعقد ہوا جس میں جموں کشمیر کے مختلف مقامات سے آے علماکرام نے خطاب کیا ااور 9حافظ کرام کی دستاربندی کی گئی۔ سال 2016 میں اس مدرسے کی سنگ بنیاد ڈالی گئی تھی اور ا ب تک اُسے مدرسے سے بارہ حافظ کرام نکلے ہیں۔ اس اجلاس میں بڑی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی۔ یہ اجلاس مولانہ مفتی نورحسین قاسمی میں زیرصدارت منعقد ہوا جس میں جموں سے مفتی صضیر احمد ، کشمیر سے مفتی توصیفالرحمن بھدرواہ سے مفتی نورحسین کشتواڑ سے مفتی شبیر احمد کے علاوہ دیگر علماے کرام نے بھی پروگرام میں شرکت کی اور حافظ کرام کی دستار بندی کی گئی۔اس موقعہ پر مقررین نے اسلام کی اہمیت و افادیت پر زوردیا اور مدارس اسلامیہ کو وقت کی اہم ضرورت قرار دیتے ہوے لوگوں سے انکی فلاح و بہبودی کیلئے ہرطرح کی مدد کرنے پر زوردیا اور اپسی بھائی چارے و ملک مئں امن و شانتی قایم کرنے کی پرزور اپیل کی گی۔انھوں نے کہا کہ نہ صرف والدین کیلئے خوشی کا مقام ہے کہ نو بچوں نے حافظ قران کیا بلکہ یہ پورے علاقے کیلئے باعث فخر ہے اُسے پورا علاقہ دین سے مزید روشن ہوگا۔خطبہ اسقبالیہ مدرسہ جامعہ محمدیہ کے مقیم حافظ شریف احمد اخباری نے انجام دے جبکہ پروگرام کے اخر میں نکاح کی مجلس بھی منعقد ہوئی اور دعابھی کی گئی۔