عالمی عدالت کے فیصلے پرعملدرآمد ہو | اسپین کااسرائیل پررفع میں فوجی مہم ختم کرنے پرزور

یواین آئی

میڈرڈ// اسپین نے اسرائیل سے اپیل کی ہے کہ وہ اقوام متحدہ کی عدالت کے فیصلے کو لاگو کرتے ہوئے رفح میں فوجی آپریشن ختم کرے۔ہسپانوی وزیر خارجہ ہوزے مینوئل البیرس نے اسرائیل سے مطالبہ کیا کہ وہ رفح میں اسرائیل کی فوجی کارروائی ختم کرنے کے عالمی عدالت انصاف (آئی سی جے) کے فیصلے پر عمل درآمد کرے۔قابل ذکر ہے کہ آئی سی جے کے صدر نواف سلام نے جمعہ کے روزکہا تھا کہ اسرائیل کو جنوبی غزہ کی پٹی میں رفح میں اپنی فوجی کارروائی روکنی ہوگی۔ جج نے کہا، “نسل کشی کے الزامات کی تحقیقات کرنے والے مشنوں کے ساتھ ساتھ انسانی امداد کے لیے انکلیو تک بلا روک ٹوک رسائی کو یقینی بنایا جانا چاہیے۔” بین الاقوامی عدالت رفح میں اسرائیل کی جارحیت کے خاتمے سمیت احتیاطی تدابیر کو لازمی قرار دیتی ہے۔ ” جنگ بندی، یرغمالیوں کی رہائی اور انسانی ہمدردی کی بنیاد پر غزہ کے لوگوں کی تکالیف ختم ہونی چاہیے اور تشدد رکنا چاہیے۔”اسی دوران اسپین کی وزیر دفاع مارگریٹا روبلز نے کہا کہ غزہ کی صورتحال ‘حقیقی نسل کشی’ ہے۔ انہوں نے ہسپانوی نیوز چینل آر ٹی وی ای کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ دنیا میں جو کچھ بھی ہو رہا ہے، اسپین ہمیشہ اس پر نظر رکھتا ہے۔ ہم یہ نہیں بھول سکتے کہ یوکرین میں لوگ مر رہے ہیں، وہاں ایک خوفناک جنگ جاری ہے اور غزہ میں جو کچھ ہو رہا ہے اسے نظر انداز نہیں کرنا چاہیے، جو کہ ایک حقیقی نسل کشی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اسپین اور اس کی مسلح افواج امن کے لیے مضبوطی سے پرعزم ہیں۔عالمی عدالت نے اسرائیل کو رفح کراسنگ کو بھی کھلا رکھنے کا حکم دیا تھا تاکہ انسانی امداد کی بلا رکاوٹ رسائی کو یقینی بنایا جا سکے۔