شاہدرہ قصبہ میں صفائی کا فقدان

 تھنہ منڈی // مشہور و معروف صوفی بزرگ بابا غلام شاہ بادشاہ کی زیارت کے احاطہ میں پاکی اور صفائی ستھرائی کا کوئی مناسب اور معقول انتظام نہیں ہے جس سے عقیدت مندوں، ڈرائیور طبقہ اور مقامی دکانداروں کو شدید پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ درگاہ شریف کی زیارت کے لئے روزانہ ہزاروں زائرین دور دراز کے علاقوں سے یہاں آتے ہیں۔ یہاں عام دنوں کے مقابلے میں جمعرات اور اتوار کے دن بہت زیادہ بھیڑ رہتی ہے۔ محکمہ اوقاف اسلامیہ کے ماتحت درگاہ شریف کا سارا نظام چلتا ہے جہاں لاکھوں روپے ماہانہ اور کروڑوں روپے کی سالانہ آمدنی ہوتی ہے لیکن اس کے باوجود درگاہ شریف کے احاطہ اور چھوٹے سے قصبے میں صفائی ستھرائی کا کوئی مناسب اور معقول انتظام نہیں ہے جس کے سبب زائرین کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ مکینوں اور عقید ت مندوں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ اس بارے میں متعلقہ محکمہ علم ہونے کے باوجود خاموشی اختیار کئے ہوئے ہے جو انتہائی افسوس ناک بات ہے۔اس موقع پر زائرین کے ساتھ ساتھ مقامی دکانداروں سلیم قریشی ، عابد حسین اور طاہر قریشی وغیرہ نے ضلع انتظامیہ اور گورنر انتظامیہ سے مطالبہ کیا ہے کہ زائرین کی سہولت کے لئے درگاہ شریف کے احاطہ میں صفائی ستھرائی وغیرہ کے سلسلہ میں ضروری اقدامات اٹھائے جائیں۔