سمندری طوفان رائے فلپائن سے ٹکرا گیا

منیلا (// فلپائن میں رواں سال کے بدترین طوفان کے باعث ایک لاکھ سے زائد افراد بے گھر ہوگئے۔ رائی طوفان کی بلند لہریں ساحل سے ٹکراگئیں، جس کے بعد مختلف علاقون میں سیلابی صورت حال پیدا ہوگئی۔ حکام کا کہنا ہے کہ زیر آب علاقوں میں تودے گرنے کا خدشہ ہے۔ ذرائع ابلاغ کے مطابق ملک بھر میں شدید بارش کا سلسلہ جاری ہے۔فلپائن میں 165 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے ہوائیں چل رہی ہیں ،جب کہ ساحلی علاقوں سے تقریباً 45 ہزار افراد محفوظ مقامات کی طرف نقل مکانی کر گئے ہیں۔ شدید طوفان کے باعث فلپائن کے بیشتر حصوں میں پروازیں منسوخ کر دی گئی ہیں۔ واضح رہے کہ یہ فلپائن میں رواں سال کا پندرواں طوفان ہے۔ انٹرنیشنل فیڈریشن آف ریڈ کراس اور ریڈ کریسنٹ سوسائٹیز نے فلپائن میںآنے والے اس طوفان کو 2021 ء  میں دنیا کے سب سے طاقتور طوفانوں میں سے ایک قرار دیتے ہوئے لاکھوں لوگوں کے متاثر ہونے کا خدشہ ظاہر کیا ہے۔ادھر امریکی صدر جو بائیڈن نے طوفان سے متاثرہ علاقوں کا دورہ کرکے متاثرین کے لیے امداد کا وعدہ کیا۔ خبررساں ادارووں کے مطابق امریکی تاریخ کے طاقت ور ترین طوفان نے گزشتہ ہفتے 4ریاستوں میں تباہی مچا دی تھی۔ سب سے زیادہ متاثرہ ریاست کینٹکی ہے، جہاں 74افراد کی ہلاکت کی تصدیق کی جا چکی ہے۔ بائیڈن نے اس ریاست کے متاثرہ علاقوں کے دورے پر مقامی لوگوں کو یقین دہانی کرائی کہ وہ بنیادی ڈھانچے اور مکانات کی دوبارہ تعمیر کرائیں گے اور حکومت اس کا پورا خرچہ اٹھائے گی۔