تاریگامی کالیفٹیننٹ گورنر کے نام مکتوب

سرینگر//کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا (مارکسسٹ) کے رہنما یوسف تاریگامی نے نومنتخب ضلع ترقیاتی کونسلوں کے چیئرمین اور ان کے نائبین و ممبران ،پنچایت سمیت بلاک ترقیاتی کونسلوں کوباختیار بنانے پرزوردیتے ہوئے لیفٹینٹ گورنرمنوج سنہا کو ایک مکتوب روانہ کیا ہے جس میں شکایت کی گئی ہے کہ ضلع ترقیاتی کونسلوں  کے نومنتخب ممبران ،نائب چیئرمینوں اور بلاک ڈیولپمنٹ کونسل ممبروں کے تحفظات ، جس میں پروٹوکول اور مشاہیرہ بھی شامل ہے، کو ابھی تک منظور نہیں کیا گیا۔ایک بیان کے مطابق تاریگامی نے کہاکہ جموں میں انتظامیہ کے اعلان کردہ پروٹوکول اور مشاہرے کے حوالے سے ضلعی ترقیاتی کونسلوں کے نومنتخب ممبران ، نے عدم اطمینان کا اظہار کیا۔تقریباً ایک مہینہ گزر جانے کے بعد ان کی جائز مانگوں کو ابھی تک بھی پورا نہیں کیا گیا  ہے۔ انہوں نے کہا کہ لیفٹینٹ گورنرکی ذاتی مداخلت سے ان کی حقیقی شکایات کے ازالہ کی یقین دہانی کے بعد ہی انہوں نے اپنا احتجاج ختم کردیاتھا۔  خطے میں پنچایتی راج نظام کی توقعات کا ادراک کرنے کے لئے نہ صرف ڈی ڈی سی ممبر ، بلکہ تمام نمائندوں ، جن میں نچلی سطح سے منتخب ہونے والے ، پنچایت اور بلاک ترقیاتی کونسل کے ممبران کو بھی مکمل طور پر بااختیار بنانے کی ضرورت ہے۔انہوں نے مزیدکہا کہ اس وقت ، ان کو دیئے گئے اختیارات ان کے منڈیٹ کے مطابق موثر انداز میں کام کرنے کے لئے ناکافی ہیں۔ ڈی ڈی سی کے قواعد وضع کرنے میں  ہونے والی تاخیر نے ان نمائندوں کو ان کے کردار اور ذمہ داری کے بارے میں غیر یقینی صورتحال میں رکھا ہوا ہے۔ حیرت کی بات ہے کہ حال ہی میں منتخب ہونے والی پنچایتوں کی تشکیل بھی ابھی باقی ہے۔ تاریگامی نے کہاچونکہ خطے میں ، خاص طور پر وادی کشمیر اور پہاڑی علاقوں میں ، موسمی حالات کی وجہ سے کام کرنے کا وقت محدود ہے ، لہذا ضروری ہے کہ پنچایتی اداروں کو بااختیار بنانے کا فیصلہ جلد سے جلد لیا جائے ، تاکہ یہ ادارے مناسب کارکردگی کا مظاہرہ کر سکے اورعام لوگوں کے روز مرہ مسائل کے حل کو یقینی بنایا جائے۔خط میں تاریگامی نے گورنر موصوف سے گزارش کی ہے کہ وہ متعلقہ ذمہ داران کو بغیر کسی تاخیر کے ان مسائل کو حل کرنے کی ہدایت کریں۔ اگرچہ ان کے حق میں پروٹوکال جاری ہوچکا ہے لیکن دیگر امور ابھی بھی حل طلب ہیں۔