بسنت باغ سرینگر میں ہولناک آگ

 سرینگر//بسنت باغ سرینگر میں آگ کی ایک واردات میںرہائشی مکان خاکستر ہوا جس میں 2بہنوں کی شادی کا سارا سامان ،2لاکھ روپے اور زیورات راکھ کے ڈھیر میں تبدیل ہوگئے۔ بسنت باغ میں سوموار کی علی الصبح مشتاق احمد شیخ کے رہائشی مکان میں آگ نمودار ہوئی جس نے دیکھتے ہی دیکھتے پورے مکان کو اپنی لپیٹ میں لے لیا۔ آگ لگتے ہی لوگوںنے فائرسروس عملہ کو مطلع کیا اور اس دوران مقامی آبادی نے آگ پر قابو پانے کی کوشش کی ۔ فائر سروس عملہ نے علاقہ میں پہنچ کر آگ بجھانے کی کارروائی شروع کی اور کئی گھنٹوں کی جدوجہد کے بعد آگ کو مزید پھیلنے سے روک دیا اور آگ پر قابو پالیا۔ آگ سے مالک مکان مشتاق احمد شیخ نے بتایا کہ سوموار کو جب وہ نیند سے اٹھے تو مکان کی اوپری منزل میں آگ لگی تھی جو اس قدر بھیانک تھی کہ دور دور سے اس کے شعلے دیکھے جاسکتے تھے۔ انہوںنے کہاکہ آگ لگنے کی اطلاع دینے کے 10منٹ بعد فائر سروس عملہ پہنچا تاہم تب تک مکان خاکستر ہوچکا تھا۔ انہوںنے کہاکہ 15دنوں بعد اس کی 2بیٹیوں کی شادی ہے اور گھر میں موجود شادی کیلئے لایا گیا سامان جل گیا۔ مذکورہ شہری نے کہاکہ آگ میں اس کی دونوں بیٹیوں کے زیورات اور ملبوسات کے علاوہ الماری میں آشپازوں کیلئے پیشگی رقم 2لاکھ روپئے بھی راکھ کے ڈھیر میں تبدیل ہوگئے۔ مشتاق احمد شیخ نے مزید کہاکہ اُس کی 3بیٹیاں ہیں اور آگ لگنے کی وجہ سے سارا کنبہ سڑک پر آگیا ہے اور تن کے کپڑوں اور 3بستروں کے علاوہ کچھ نہیں بچ سکا۔ انہوںنے کہاکہ وہ سرینگر میونسپل کارپوریشن میں صفائی کرمچاری سبکدوش ہوا ہے ۔ انہوںنے حکومت سے مالی تعاون کی اپیل کرتے ہوئے کہا ’’میری 2بیٹیوں کی 15دنوں بعد ہونے والی شادی کو مدنظر دیکھ کر تعاون کریں‘‘۔