ایشیا کپ ویمنز ٹی 20 فائنل میں بنگلا دیش نے بھارت کو شکست دے دی

کوالالمپور/کپتان ھرمن پریت کور کی اکیلے جدوجہد خاتون ایشیا کپ ٹوئنٹی 20 کے اتوار کو ہوئے فائنل میں ناکافی ثابت ہوئی اور اچھی تال کے باوجود ہندوستانی کرکٹ ٹیم بنگلہ دیش کے ہاتھوں تین وکٹ کی شکست کے ساتھ خطاب گنوا بیٹھی۔ہندوستانی ٹیم کو آغاز سے ہی خطاب کا دعویدار مانا جا رہا تھا لیکن فائنل میں بنگلہ دیشی خواتین کرکٹ ٹیم نے گیند اور بلے سے آل راؤنڈ کھیل دکھاتے ہوئے ایشیا کپ اپنے نام کر لیا۔بنگلہ دیش کی کپتان سلمی خاتون نے ٹاس جیتنے کے بعد ہندستان کو پہلے بلے بازی کا موقع دیا جو خراب کارکردگی کی وجہ سے مقررہ اوورز میں نو وکٹ گنوا کرصرف 112 رن ہی بنا سکیں۔زبردست گیند بازی کے بعد بنگلہ دیشی خواتین نے تسلی بخش بیٹنگ بھی کی اور 20 اوورز میں سات وکٹوں کے نقصان پر 113 رنز بنا کر جیت اور خطاب اپنے نام کر لی۔ بنگلہ دیش کے لیے نگار سلطانہ نے 27 رنز اور رومانا احمد نے 23 رن بنائے ۔ہندستانی ٹیم کے لیے کپتان ھرمن پریت نے خراب شروعات کے بعد مڈل آرڈر میں اکیلے دم پر جدوجہد کی اور 42 گیندوں میں سات چوکوں کی مدد سے 56 رن کی واحد تسلی بخش اننگز کھیلی۔بلے بازوں کی ناقص کارکردگی کا اندازہ اسی سے لگایا جا سکتا ہے کہ ٹیم کی صرف چار کھلاڑی ہی دھائی کے ہندسے کو چھو سکیں۔ہندستانی گیند بازوں نے چھوٹے ہدف کا دفاع کرنے کے لئے اگرچہ کافی جدوجہد کی لیکن بنگلہ دیش نے مقررہ اوورز میں آخری وقت میں جیت یقینی کی۔بولر پونم یادو نے چار اوورز میں نو رن پر چار وکٹ کی بہترین گیند بازی سے ایک وقت ہندستان کو میچ میں واپسی د لا دی تھی۔پونم نے بنگلہ دیش کے ابتدائی چار بلے بازوں شمیمہ سلطانہ (16)، عائشہ رحمان (17)، فرغانہ حق (11) اور نگار سلطانہ (27) کے وکٹ نکالے ۔وہیں ھرمن پریت نے بلے بازی کے بعد بولنگ میں بھی کپتان کی طرح مظاہرہ کیا اور فہیمہ خاتون (نو) اور سنجیدہ اسلام (پانچ) کے مسلسل دو وکٹ نکالے لیکن چھوٹے ہدف کی وجہ سے پھر میچ ان کے ہاتھوں سے نکل گیا۔بنگلہ دیش کے لیے نگار نے 24 گیندوں میں چار چوکے لگا کر 27 اور رومانا نے 22 گیندوں میں ایک چوکا لگا کر 23 رن بنائے ۔رومانا کو دپتی شرما اور ھرمن پریت نے 111 کے اسکور پر رن آؤٹ کیا لیکن جہاں آراعالم نے ایک گیند پر ناٹ آؤٹ دو رنز بنا کر ٹیم کو جیت کے لیے ضروری 113 تک پہنچا کر جیت کی خانہ پری کی۔