یمن سے سعودی عرب پر میزائل حملہ،3 شہری ہلاک

ریاض// سعودی عرب کی سرزمین پر یمن سے حوثی باغیوں کے راکٹ حملے میں 3 سعودی شہری ہلاک ہوگئے۔عرب نیوز کی رپورٹ کے مطابق حوثی باغیوں نے یمن سے سعودی عرب کے جنوبی صوبے جازان پر راکٹ فائر کیے جس کی وجہ سے تین شہری ہلاک ہوگئے۔سعودی سرکاری ٹیلی ویڑن کے مطابق یمن میں موجود سعودی اتحادی فوج کے ترجمان کرنل ترکی المالکی نے تصدیق کی کہ حوثی باغیوں نے جان بوجھ کر شہری آبادی کو نشانہ بنایا۔ان کا کہنا تھا کہ سعودی عرب اپنے شہریوں کو درپیش کسی بھی خطرے اور جارحیت کا منہ توڑ جواب دے گا۔یاد رہے کہ گزشتہ برس مارچ میں حوثی باغیوں کی جانب سے سعودی عرب پر 7 راکٹ داغے گئے تھے جن کے بارے میں سعودی حکام نے دعویٰ کیا تھا کہ ان راکٹوں کو فضا میں ہی تباہ کردیا گیا تھا۔یہ بھی یاد رہے کہ اپریل کے مہینے میں سعودی فورسز نے یمن کے حوثی باغیوں کی جانب سے نجران کے علاقے میں فائر کیے گئے میزائل کو تباہ کردیا تھا جس کے نتیجے میں ایک شخص زخمی ہوا تھا۔یاد رہے کہ یمن میں سعودی عرب کے اتحادیوں کی جانب سے 2015 میں حوثی باغیوں کے خلاف جنگ کا آغاز کیا گیا تھا جس کا مقصد باغیوں کے قبضے سے یمن کے دارالحکومت سمیت کئی اہم شہروں کا قبضہ حاصل کرنا تھا۔سعودی عرب اور اس کے اتحادیوں کی جانب سے یمن پر حملے کے بعد سے وہاں صورتحال مزید کشیدہ ہے۔