ہاسپیٹالیٹی اور ٹورزم مینجمنٹ

تعارف 
عالمگیریت (گلوبلائزیشن )کے اس دور میں ہاسپیٹالیٹی (مہمان نوازی، خاطر مدارت) کی صنعت نہ صرف یہ کہ اہمیت رکھتی ہے بلکہ تیزی سے ایک پیشہ ور کیریئر فراہم کرے والی صنعت بن گئی ہے۔ اس شعبہ میں طالبعلم کو کاروبار اور ہوٹل انڈسٹری سے متعلق مختلف پہلوئوں سے روشناس کرایاجاتا ہے اور معلومات کے ساتھ ساتھ عملی تربیت بھی دی جاتی ہے۔ ہوٹل انڈسٹری سے وابستہ مختلف افعال جس میں سفر(ٹریول)، سیرو تفریح (ٹورزم)، اعلیٰ درجے کے ہوٹلوں میں مہمانوں کی خاطر مدارت(ہاسپیٹالیٹی)، رکھ رکھائو اور کھانے پینے کے انتظامات(ہائوس کیپنگ اور کیٹیرنگ)اورصارفین کی خدمات (کسٹمر سروسز) وغیرہ کی تعلیم وتربیت دی جاتی ہے۔ 

کورس کے خد و خال

بھارت میں بہت سارے مینجمنٹ اداروں میں ہاسپیٹالٹی مینجمنٹ کے ڈپلوما اور ڈگری کورس جاری ہیں جس میں طالب علموں کو مہمانوں کے شعبے میں نگرانی اور انتظامی ذمہ داریاں کو مؤثر طور پر سنبھالنے کے لئے تمام مطلوبہ علم، مہارت اور نقطہ نظر حاصل کرنے میں مدد ملتی ہے۔ یہ کورسز اصول انتظامیہ کے اطلاق پر زیادہ زور دیتے ہیں نہ صرف تعلیم بلکہ مختلف شعبوں میں عملی تربیت کے مواقع بھی فراہم کیے جاتے ہیں ان میں غذا کی تیاری(فوڈ پروڈکشن) ، غذا اور مشروبات کی خدمات(فوڈ اینڈ بیوریجز سروسز)، دفتری کام اور ہائوس کیپنگ کی خدمات شامل ہیں۔ اس کے علاوہ یہ کورس فروخت، بازار کاری(مارکیٹنگ)، مالی انتظامیہ، انسانی وسائل انتظامیہ، ہوٹل اورپکوان کے قوانین، اثاثہ جات انتظامیہ، انتر پرینرشپ (کاروباری امور) انتظامیہ، ٹورزم اسٹڈیز میں درکار کمپیوٹر کی معلومات بھی فراہم کرتا ہے۔ 

 درکار مہارت و رجحان

ایسے طلبہ جو ہاسپیٹالیٹی مینجمنٹ کورس میں دلچسپی رکھتے ہیں اور کیرئیر بنانا چاہتے ہیں ان کے لیے لازمی ہے کہ ان کا اچھا تنظیمی پس منظر ہو، بات چیت ، گفتگو کے آداب سے واقفیت (اچھی کمیونکیشن سکل) ، باہمی تعلقات کو بہتر بنانے اور برقرار رکھنے کی مہارت اور نظم و ضبط کی پابندی کی قابلیت و مہارت ہو۔ اس شعبے میں کامیابی کے لیے امیدوار کو باہمی تعاون کے جذبے سرشار ، نرم گفتار، مہمانوں سے عزت سے پیش آنے والااور دوسروں کی تنقیدوں کو خندہ پیشانی سے قبول کرنے والاہونا چاہیے۔ 

روزگار کے مواقع 

ہاسپیٹالیٹی اور ٹورزم مینجمنٹ کے تحت درج ذیل شعبوں اور صنعتوں(انڈسٹریز) میں روزگار کے مواقع دستیاب ہیں۔ ہاسپیٹالیٹی مینجمنٹ میں ڈپلوما اور ڈگری (گریجویشن) کرنے کے بعد روزگار کے علاوہ پوسٹ گریجویشن (ماسٹر ڈگری ) اور اعلیٰ تعلیم بھی بھی حاصل کی جاسکتی ہے۔ 

چند اہم شعبے

ائیرلائنس اور ریلوے ٹورزم ، ٹریول ایجنسیاں ، کانفرنسیں اور کنونشن سینٹرز ، ٹورسٹ آفس ، وزارت سیاحت ، ٹور آپریٹرس، اِسپا اور صحت کے مراکز، کروز کمپنیاں (سمندری سیاحت کے مقصد سے قائم کردہ کمپنیاں)، ایونٹ مینجمنٹ کمپنیاں، میوزیم اور دیگر ثقافتی مراکز ، تھیٹر اور کنسرٹ ادارے، فٹ نیس سینٹرو سپورٹس تنظیمیں(جم، گولف کلب، تھیم پارک وغیرہ)، رئیل اسٹیٹ مینجمنٹ کمپنیاں، ہوٹل اور سیاحتی سامان تیار کرنے والی کمپنیاں وغیرہ ۔ اس کے علاوہ تھوڑے سرمائے کی مدد سے ایک گریجویٹ شخص اپنا خود کا روزگار ٹریول و ٹورزم ایجنسی کے طور پر کرسکتا ہے ، چھوٹے شہروں میں مختلف ہوٹلوں میں کنسلٹنٹ کے طور پر کام کرسکتا ہے ۔ ایک پوسٹ گریجویٹ امیدوار ہوٹل اور ہاسپیٹالیٹی  مینجمنٹ کے کالجوں میں بطور لیکچرر بھی اپنی خدمات انجام دے سکتا ہے۔ 

تنخواہ  

ہاسپیٹالیٹی مینجمنٹ میں ڈپلوما یا ڈگری کرنے کے بعد امیدوار کو بطور ٹرینی (تربیتی امیدوار) منتخب کیا جاتا ہے۔ چھ مہینے یا ایک سال تربیت کی مدت مکمل ہونے پر امیدوار کو دس ہزار تا پندرہ ہزار روپئے ماہانہ تنخواہ دی جاتی ہے ۔ تجربہ اور صلاحیت کی بنیاد پر امیدوار ترقی کرسکتا ہے اور منیجر کے عہدے تک پہنچ سکتا ہے۔ اچھی کمپنیوں اور فائیو اسٹار و سیون اسٹار ہوٹلوں میں ایک منیجر ایک تا دیڑھ لاکھ ماہانہ تنخواہ حاصل کرسکتا ہے۔ 

دوران ملازمت قابلیت میں اضافہ

ویسے تو اس کورس کے دوران امیدوار کو مناسب تربیت دی جاتی ہے لیکن ڈپلوما کرنے والے امیدوار کو یہ یاد رکھنا چاہیے کہ اگر وہ اس شعبے میں ترقی کرنا چاہتے ہیں تو انھیں اپنی زباندانی کی مہارت بہتر کرنی ہوگی، ملازمت کے ساتھ اپنی تعلیمی قابلیت میں اضافہ ان کی ترقی کا سبب ہوگا۔ بہتر ہے کہ ڈپلوما کرنے کے بعد امیدوار دوران ملازمت فاصلاتی طرز پر یا پارٹ ٹائم اپنی ڈگری (گریجویشن) مکمل کریں۔ ایک ڈگری یافتہ کے لیے بہتر ہے کہ وہ دوران ملازمت پوسٹ گریجویشن (ماسٹر ڈگری) حاصل کرنے کی کوشش کریں۔اس شعبے میں بیرون ملک بھی ملازمت کا کافی سکوپ ہے اس لیے امیدوار دیگر عالمی زبانیں جیسے عربی، چینی، فرانسیسی، جرمن وغیرہ سیکھ کر بیرون ملک کمپنیوں میں بھی بہتر ملازمت حاصل کرسکتا ہے۔ مزید جس شعبے میں ملازمت کررہے ہیں اس کمپنی یا انڈسٹری سے متعلق چھ مہینے یا ایک سال کے ڈپلوما و ایڈوانس ڈپلوما کورسز امیدوار کی ترقی میں معاون ثابت ہوتے ہیں ۔ مثال کے طور پر اگر آپ کیٹرنگ ڈیپارٹمنٹ میں ہیں تو کیٹرنگ کے کچھ مخصوص کورسز فائدہ مند ہوں گے۔ ائیر اور ریلوے ٹورزم میں اس شعبے سے متعلق سرٹیفکیٹ یا ڈپلوما کورسز کام آئیں گے۔ 

 داخلہ کا طریقہ کار اور ادارے

 ہوٹل مینجمنٹ، ہاسپیٹالیٹی و ٹورزم مینجمنٹ کورسز بھارت میں تقریباً ہر چھوٹے بڑے شہرکے مختلف کالجوں میں جاری ہیں۔ ایک طالب علم اگر ڈپلوما کرنا چاہے تو بارہویں کے بعد تین برسوں پر مشتمل ڈپلوما کورس کرسکتا ہے۔ اگر ڈگری (گریجویشن) کرنا چاہے تو بارہویں کے بعد اہلیتی امتحان (انٹرنس امتحان) کی بنیاد پر چار سالہ ڈگری کورس میں داخلہ لے سکتا ہے۔ ڈپلوما مکمل کرنے کے بعد ڈگری میں داخلہ مل سکتا ہے۔ کچھ کالج ڈپلوما کامیاب طلبہ کو ڈگری کے دوسرے سال میں بھی داخلہ دیتے ہیں۔ ڈگری مکمل کرنے کے بعد پوسٹ گریجویشن(ماسٹرس) کیا جاسکتا ہے مزید اس شعبے میں ڈاکٹریٹ(پی ایچ ڈی) بھی کی جاسکتی ہے۔ 

 فیس

ان کورسز کی فیس طے نہیں ہے، چونکہ زیادہ تر ادارے نجی ہیں اور مختلف یونیورسٹیز سے الحاق کرکے ادارے یہ کورسز چلاتے ہیں اس لیے ان کی فیس ایک دوسرے سے مختلف ہوتی ہے۔ عموماً ڈپلوما کورسز کی فیس تین سال کے لیے دیڑھ لاکھ سے دو لاکھ کے درمیان ہوتی ہے۔ جبکہ بیچلر ڈگری کی فیس سالانہ تقریباً پچاس ہزار سے ایک لاکھ کے درمیان ہوتی ہے۔ 

اہم داخلہ امتحانات

عام طور پر ان کورسزکے نام ایک دوسرے سے مختلف ہوتے ہیں۔ کچھ ادارے ڈپلوما اور ڈگری کے لیے داخلہ امتحانات منعقد کرتے ہیں کچھ جگہوں پر راست داخلہ بھی ہوجا تاہے ۔چند اہم داخلہ امتحانات درج ذیل ہیں۔(۱) نیشنل کائونسل فار ہوٹل مینجمنٹ اینڈ کیٹرنگ ٹیکنالوجی جوائنٹ انٹرنس امتحان (NCHMCT JEE) ،(۲)مہاراشٹر ہوٹل مینجمنٹ کامن انٹرنس ٹیسٹ (MH HM CET) (۳)انڈین انسٹی ٹیوٹ آف ہوٹل مینجمنٹ(IIHM eCHAT)(۴)کرائسٹ یونیورسٹی انٹرنس ٹیسٹ (۵)انسٹی ٹیوٹ آف ہوٹل مینجمنٹ اورنگ آباد انٹرنس امتحان (۶)اوبیرائے STEPوغیرہ۔
فون نمبر۔9970809093
ای میل۔mominfahim@rediffmailcom