گلمرگ میں سرمائی سیاحتی سرگرمیوں کی تیاریاں

 سری نگر//لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر بصیر احمد خان نے ایس کے آئی سی سی سرینگر میں مشہور شہرہ آفاق سیاحتی مقام گلمرگ میں سرمائی سیاحت کے انعقاد کی تیاری اور مختلف دیگر سرگرمیوں کا جائزہ لینے کے لئے ایک میٹنگ کی صدارت کی۔کمشنر سیکرٹری سیاحت و ثقافت سرمد حفیظ نے بذریعہ ویڈیو کانفرنسنگ میٹنگ میں شرکت کی جبکہ ناظم سیاحت کشمیر ، ناظم ائیر پورٹ اَتھارٹی ، سی ای اوٹوراِزم ڈیولپمنٹ اَتھارٹی گلمرگ ، ایم ڈی جے اینڈ کے کیبل کار کارپوریشن ، ایس ڈی ایم گلمرگ ، اے ڈی سی بارہمولہ ، چیف انجینئر ایم ای ڈی ، پرنسپل آئی آئی ایس ایم گلمرگ اور جے اینڈ کے سپورٹس کونسل آفیسر میٹنگ میں موجود تھے۔بنیادی سہولیات کی دستیابی کا جائزہ لیتے ہوئے مشیر بصیر خان نے اَفسروں کو ہدایت دی کہ وہ بلا خلل بجلی اور پینے کے پانی کی ترسیل اور سڑکوں پر برف ہٹانے وغیرہ ضروریات کا بہتر اِنتظام کریں تاکہ سیاحوں اور مختلف پروگراموں میں شرکت کرنے والے اَفراد کو کسی بھی قسم کی تکلیف نہ ہو۔اُنہوں نے اَفسروں کو گلمرگ میں بنیادی سہولیات کا آڈِٹ کرنے کی ہدایت دی تاکہ کسی بھی کمی کو قبل از وقت  پورا کیا جاسکے۔بجلی کی دستیابی کا جائزہ لیتے ہوئے مشیر نے کہا کہ گلمرگ اور ٹنگمرگ میں جن سیٹوں کے علاوہ اِضافی بجلی کے ٹرانسفارمر بھی مہیا کئے جائیں۔اُنہوں نے اَفسروں سے کہا کہ سرما میں سیاحتی سرگرمیاں آسانی اور خوش اسلوبی سے انجام دینے کے لئے ہوٹلوں ، پونی والوں ، ٹرانسپورٹروں ، نجی کھلاڑیوں اور دیگر متعلقہ شراکت داروں سے میٹنگ کریں۔مشیر نے اَفسران کو ہدایت دی کہ سرما کے دوران گلمرگ میں ہونے والی سرگرمیوں کے ضمن میں یہاں ہونے والی مختلف سرگرمیوں کا کیلنڈر جاری کیا جائے ۔مشیر کو جانکاری دی گئی کہ یہاں وائٹ کرسمس ، سنو کارنیوال ، صوفی پروگرام ، جونیئر سکی چمپئن شپ ، قومی اور بین الاقوامی کھیلوں کے مقابلے ، مہم جوسرگرمیاں وغیرہ سمیت مختلف پروگراموں کا اِنعقاد کیا جائے گا۔مشیر نے ناظم ائیرپورٹ کو ہدایت دی کہ وہ براہ ِراست ہیلی کاپٹر اور ٹیکسی سروس کے اِنتظامات گلمرگ کے علاوہ سیاحوں کی بڑی تعداد میں آمد کے اِنتظامات کرے۔اُنہوں نے محکمہ صحت کے اَفسران کو سری نگر ایئر پورٹ ، قاضی گنڈ اوٹنگمرگ پر سیاحوں کے باقاعدہ کووِڈ ٹیسٹ کرانے کی ہدایت جاری کی۔اُنہوں نے ناظم صحت سے کہا کہ وہ اِضافی ایمبولنس گاڑیوںکو ایس ڈی ایچ ٹنگمرگ پر دستیاب رکھیں۔دریں اثنا سرمد حفیظ نے کہا کہ گلمرگ ایک کووِڈفری جگہ ہے اور کسی بھی بیماری کے پھیلاؤ سے بچنے کے لئے مناسب اِقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔ اُنہوں نے کہا کہ ہیلتھ افسران اور اہلکاروں کی ایک ماہر ٹیم کو سیاحوں اور دیگر اَفراد کے کووِڈ ٹیسٹ کے لئے تعینات کیا جائے۔اُنہوں نے یہ بھی کہا کہ موبائل بیت الخلائوں کی معقول دستیابی اور عوامی سہولیات کو صاف رکھنا چاہئے۔مشیر خان نے کہا کہ تمام متعلقہ محکموں پر مشتمل جوائنٹ کنٹرول روم قائم کیا جائے جو تمام اہم انتظامات کے علاوہ اوور چارجنگ اور روڈ بلاکس کی نگرانی کرے گا۔اِس موقعہ پر بصیر خان نے کہا کہ سرمائی سیاحت سے جموں وکشمیر میں تمام باقی شعبے بھی مستحکم ہوں گے اورانہیں تقویت ملے گی۔ اُنہوں نے ناظم سیاحت کو ہدایت دی کہ وہ سردیوں کے دوران گلمرگ کی گلیمر میں اضافہ کرنے کے لئے ہوٹل والوںسے ایک میٹنگ منعقد کریں تاکہ وہ اپنے ہوٹلوں کو رنگ برنگی لائیٹوں سے روشن کرسکے۔اُنہوں نے یہ بھی کہا کہ ٹرانسپورٹروں اور پونی والوں کے لئے صلاحیت پیدا کرنے کا پروگرام منعقد کیا جانا چاہئے تاکہ انہیں سیاحوں کے ساتھ مہمان نوازی کے سلسلے میں تعلیم دی جاسکے۔