کابل ائرپورٹ سے امریکی فضائیہ کا طیارہ اڑنے سے تین افراد ہلاک

کابل// پیر کو کابل ائرپورٹ پر سینکڑوں افراد کو امریکی فضائیہ کے سی 17 طیارے میں سوار ہوتے دیکھا گیا جب لوگ دارالحکومت کابل کو طالبان کے قبضے میں جانے کے بعد وہاں سے نکلنے کے لیے دوڑ پڑے۔ ان میں سے  کئی لوگوں کے طیارے سے گرنے سے موت بھی  ہوچکی ہے۔ایک ویڈیو میں دکھایا گیا ہے کہ امریکی فضائیہ کا سی 17 طیارہ ہوائی اڈے سے اڑنے کے بعد تین افراد ہلاک  ہوگئے۔ سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کی گئی ویڈیوز میں دکھایا گیا کہ سینکڑوں افغان رن وے پر سی۔17 کے ساتھ دوڑ رہے ہیں۔ کچھ مسافر طیارے کے باہر لینڈنگ گیئر سے چپکے ہوئے دیکھے گئے۔ایک اور ویڈیو میں طیارے کے اْڑنے کے بعد کچھ چیزیں آسمان سے گرتی ہوئی دیکھی گئیں۔ بعد میں  مقامی لوگوں کے ذریعہ جمع کیے گئے تینوں افراد کی لاشوں کی تصویریں سوشل میڈیا پر منظر عام پر آئیں۔ یہ لوگ کابل کے علاقے خیرخانہ کے قریب طیارے سے گرنے کے بعد ہلاک ہوئے۔اس سے قبل  کابل کے حامد کرزئی بین الاقوامی ہوائی اڈے پر افراتفری تھی جب طالبان کے ملک پر قبضہ کرنے اور افغان صدر اشرف غنی کے ملک چھوڑنے کے ایک دن بعد کئی افراد کے ہلاک اور زخمی ہونے کی اطلاعات سامنے آئیں۔طلوع نیوز ایجنسی نے ایک ویڈیو دکھائی جس میں سیکڑوں افراد گولی باری کے بعد رن وے پر بھاگتے ہوئے نظرآئے۔ بعد میں اس نے ہوائی اڈے پر زمین پر مردہ کچھ لوگوں کی مبینہ تصاویر بھی دکھائیں۔واضح رہے کہ اتوار کے بعد سے کابل ائر پورٹ پر بہت بڑا ہجوم جمع ہو گیا ہے۔ طالبان کے ملک پر قبضہ کرنے کے بعد لوگوں کو افغانستان چھوڑتے دیکھا گیا۔ ہوائی اڈے پر سوئے ہوئے لوگوں کی ویڈیو اور تصاویر اور طیارے کے ارد گرد ہجوم سوشل میڈیا پر دیکھا گیا۔پیر کو ہوائی اڈے سے تمام تجارتی پروازوں کی منسوخی کا اعلان کیا گیا ہے۔