ڈی ڈی سی چنائو کا آخری مرحلہ آج : راجوری اور پونچھ کے چار حلقوں میں ووٹنگ ہوگی

راجوری//ضلعی ترقیاتی کونسل کے انتخابات کے آخری مرحلے کے تحت ووٹنگ آج راجوری اور پونچھ کے چار انتخابی حلقوں میں ہوگی جس میں کچھ پولنگ اسٹیشنوں پر حکام کو پریشانی کا خدشہ ہے جس کی وجہ سے سیکورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے ہیں۔عہدیداروں نے بتایا کہ آخری مرحلے میں ضلع راجوری کے سندربنی اور درحال ڈی ڈی سی حلقوں اور پونچھ ضلع کے مینڈھر سی اور منکوٹ ڈی ڈی سی حلقوں میں ہوگی۔ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر راجوری شیر سنگھ نے بتایا کہ د رحال میں 75 اور سندر بنی میں 58 پولنگ اسٹیشن ہیں جہاں آخری مرحلے میں ووٹنگ ہوگی۔اے ڈی سی نے کہا"ان 133 میں سے 50 پولنگ اسٹیشنوں کو انتہائی حساس اور 79 کو حساس قرار دیا گیا ہے" ۔انہوں نے بتایا کہ انتخابات کے آسانی سے انعقاد کے لئے سیکورٹی کے وسیع انتظامات کئے گئے ہیں۔درحال حلقہ انتخاب میں دو آزاد امیدواروں سمیت کل آٹھ امیدوار میدان میںہیں۔دوسری طرف ڈپٹی کمشنر پونچھ راہول یادو نے بتایا کہ ضلع کے دو ڈی ڈی سی حلقوں میں 89 پولنگ اسٹیشن ایسے ہیں جہاں آخری مرحلے میں ووٹنگ ہوگی۔ڈپٹی کمشنر نے کہا’’35 پولنگ اسٹیشنمینڈھر سی میں ہیں اور منکوٹ میں 54 پولنگ اسٹیشن زیادہ تر حساس ہیں" ۔انہوں نے مزید کہا کہ انتخابات کے آسانی سے انعقاد کے لئے سیکورٹی کے وسیع انتظامات رکھے گئے ہیں اور سی آر پی سی 144 کے تحت بھی پابندی عائد کردی گئی ہے۔دریں اثنا ، پولیس انتظامیہ نے جمعہ کے روز مینڈھر سب ڈویژن کے علاقے گورسائی ہرنی میں عوامی رابطہ اجلاس منعقد کیا جہاں جمعہ کے روز ایک ڈی ڈی سی امیدوار باجی محمد فاروق پر کسی شخص نے حملہ کیا جس نے ان کی گاڑی پر پتھراؤ کیاتھا۔پولیس افسران نے علاقے کے لوگوں سے ملاقات کی اور تناؤ کو دور کرنے کی کوششیں کیں۔دوسری جانب جمعرات کے واقعہ کے لئے گورسائی پولیس اسٹیشن میں بھی قانون کے متعلقہ دفعات کے تحت ایک مقدمہ درج کیا گیا ہے ۔