پی ایچ ای ملازمین کا بچوں سمیت احتجاجی مظاہرہ

کٹھوعہ // کٹھوعہ میں محکمہ آب کے عارضی ملازمین نے اپنے بچوں سمیت مرکزی حکومت کے خلاف احتجاجی مظاہرے کئے اور اپنے مطالبوں کے حق میں جم کر نعرے بازی کی اور ایک ریلی بھی نکالی۔ احتجاجی ملازموں کے مطالبات میں بقایا تنخواہوں کی و اگذاری اور سروس کو مستقل کرنا شامل تھا ۔ اس دوران ملازموں کے ساتھ ان کے بچوں نے ہاتھوں میں تختیاں بھی اٹھائی ہوئیں تھیں  جن میں نعرے درج تھے’’ مودی تیرے راج میں، بچے بھوکے سوتے ہیں‘‘ ۔کٹھوعہ ۔ کالی باڑی سڑک پر احتجاجی ریلی بھی نکالی گئی. جیو نرین سنگھ نے بتایا کہ گزشتہ پانچ سالوں سے تنخواہوں وا گذار نہ کئے جانے سے ملازموں کے بچوں کا مستقبل برباد ہو رہا ہے اور کہا کہ جو مودی حکومت نے اچھے دنوں کا خواب دکھا کر انھوں نے ہمارے بچوں کا مستقبل تباہ و برباد کر دیا۔ گزشتہ پانچ سالوں سے تنخواہوں کی ادائیگی نہ ہونے سے ہمارے اہلخانہ فاقہ کشی کے شکار ہو گئے ہیں جسکی وجہ سے ملازمین سخت پریشان ہیں۔مظاہرین نے کہا کہ ملازموں نے اپنی سروس کو ایمانداری سے وقت وقت پر سر انجام دیا مگر افسوس کہ مودی حکومت کے پانچ سال کے راج میں ملازموں کو تنخواہوں سے محروم رکھا گیا ہے جس کے باعث وہ اپنے بچوں کی اسکول فیس ادا کرنے سے بھی قاصر ہیں اور اسکے علاوہ دکانداروں کا قرضہ بھی بہت زیادہ  بڑھ گیا ہے اور اب دکاندار بھی اْدھار دینے سے انکار کر رہے ہیں۔ انھوں کہا کہ اگر 11 اپریل سے قبل انکی تنخواہوں کی ادائیگی نہیں کی گئی تو وہ احتجاج میں مزید شدت لائیں گے اور کٹھوعہ شہر میں پانی کی سپلائی منقطع کرنے میں کوئی گریز نہیں کریں گے۔