وادی کے پہاڑوں پرفوج ،بحریہ اور فضائیہ کی مشترکہ مشق | ہیلی ڈراپ کے دوران ٹاسک فورس نے9000فٹ بلندی پرکام کیا

سری نگر//سری نگر میں قائم فوج کی چنار کور نے منگل کو وادی کشمیر کے اونچے علاقوں میں ہیلی کاپٹر سے چلنے والی تربیت اور مشق کی۔ ایک فوجی افسرنے کہا’’یہ ایک سہ فریقی مشق تھی جو کشمیر میں ہندوستانی فضائیہ، بحریہ اور فوج کے ساتھ کی گئی تھی۔‘‘انہوں نے کہا کہ مشق کا منصوبہ فضائی دفاع اور الیکٹرانک وارفیئر آپریٹنگ ماحول میں دشمن کی صفوں کے پیچھے حکمت عملی کے ساتھ ٹاسک فورس کو داخل کرنے کی مشترکہ صلاحیت کو درست کرنے کے لیے بنایا گیا تھا۔انہوںنے کہا،’’مشن کے کامیاب انعقاد نے منصوبہ بندی، وسائل کے استعمال اور متعین کردہ مشن کے مقاصد کی تکمیل میں مسلح افواج کی سہ فریقی خدمات کی حقیقی عکاسی کے طور پر حاصل کی گئی مشترکہ جذبے کی توثیق کی۔‘‘انہوں نے کہا کہ ہیلی کاپٹر سے گرائے گئے ٹاسک فورس نے 9,000 فٹ سے زیادہ کی بلندی پر برف پوش علاقے میں کام کیا اور اس میں انفینٹری، اسپیشل فورسز اور انڈین نیوی کے مارکوس کے دستے شامل تھے۔مذکورہ افسر کا کہنا تھا’’ہیلی ڈراپ مشق میں فوج اور فضائیہ کی طرف سے مکمل نقل و حمل اور مسلح ہیلی کاپٹر شامل تھے۔انہوںنے کہا کہ مشق نے چنار کور اور  فوج کی اونچائی والے علاقوں میں کامیاب آپریشن کرنے کی صلاحیت کو ظاہر کیا ہے جس میں فضائیہ اور بحریہ کے ساتھ ہم آہنگی میں عصری اور جدید میدان جنگ کے تمام پہلوں کو شامل کیا گیا ہے۔