واجب الادا رقومات کی ادائیگی اور دیگر معاملات

سرینگر// میئر اور کمشنر ایس ایم سی کی مداخلت کے بعد سرینگر مونسپل کارپوریشن میں ٹھیکداروںنے ہڑتال ختم کرنے کا علان کیا۔ واجب الادا رقومات اور دیگر معاملات اور ڈپٹی میئر اور ٹھیکداروں کے درمیان تنازعہ کے بعد ٹھیکداروں نے ٹینڈروں اور تعمیراتی کاموں کے بائیکاٹ کا اعلان کیا تھااور گزشتہ10دنوں سے وہ ایس ایم سی کے صحن میں خیمہ زن تھے۔ جمعہ کوٹھیکداروں نے ہڑتال ختم کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ کمشنر ایس ایم سی اور میئر نے معاملے میں مداخلت کی،جس کے دوران انہوں نے یقین دہانی کرائی کہ واجب الادا رقومات کی ادائیگی اور دیگر مسائل کا ازالہ کیا جائے گا۔ مونسپل کانٹریکٹرس کارڈی نیشن کمیٹی کے ذمہ داروں اور کمشنر ایس ایم سی و میئر کے ساتھ علیحدہ علیحدہ میٹنگیں منعقد ہوئیں،جس کے دوران  ٹھیکداروں کے واجب الادا رقومات اور دیگر معاملات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔معلوم ہوا ہے کہ میٹنگ میں ایس ایم سی کمشنر کے علاوہ ایڈیشنل کمشنر،ڈائریکٹر پلانگ اور چیف اکاونٹس افسر سمیت ایگزیکٹو انجینئروں اور مونسپل کانٹریکٹرس کاڑدیشن کمیٹی کے چیئرمین مشتاق احمد ملہ،نائب چیئرمین ارشد احمد بٹ اور جنرل سیکریٹری پرویز احمد درزی نے شرکت کی۔ معلوم ہوا ہے کہ ایک اور میٹنگ ایس ایم سی میئر جنید عظیم متو کے ساتھ بھی ہوئی،جس کے دوران بھی ان معاملات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ میٹنگ کے بعدمونسپل کانٹریکٹرس کارڈی نیشن کمیٹی کے نائب چیئرمین ارشد احمد بٹ نے کہا کہ کمشنر اور انکی ٹیم کے علاوہ میئر کی یقین دہانی کے بعد ٹھیکداروںنے ہڑتال ختم کرنے کا اعلان کیا۔ انہوں نے کہا کہ ماہ رمضان کو بھی مد نظر رکھا گیاجبکہ ڈرینج اور سڑکوں کی صورتحال بہت خستہ ہوچکی ہے۔