میونسپل کمیٹی بانہال میں کانگریس کے کونسلروں میں بغاوت

بانہال//ضلع رام بن میں بانہال میونسپل کمیٹی کے اندر بغاوت ہوگئی ہے اور سات میں سے پانچ میونسپل کونسلروں نے اپنے صدر اور نائب صدر کے خلاف عدم اعتماد کی تحریک پیش کی ہے اور اس سلسلے میں پانچ کونسلروں کے دستخطوں پر مبنی ایک قرارداد ایگزیکٹو افسر میونسپل کمیٹی بانہال بشیر الحسن کو پیش کی گئی ہے تاکہ مزید کاروائی کی جائے۔ میونسپل کمیٹی بانہال کے تمام سات ممبران کانگریس کی ٹکٹ پر منتخب ہوئے تھے اور اس کے بعد فاروق احمد وانی کو صدر اور اشوک کمار شرما کو نائب صدر کے عہدے کیلئے نامزد کیا گیا تھا ۔ گزشتہ روز باغی کونسلروں نے عدم اعتماد کی تحریک میں میونسپل کمیٹی بانہال کے صدر فاروق احمد وانی اور نائب صدر آشوک کمار شرما پر طاقت کا غلط استعمال کرنے اور اپنے فرض میں مسلسل ناکامی کا الزام عائد کیا ہے۔سات میں سے پانچ کونسلروں کا کہنا ہے کہ 18 مئی کو انکی ایک میٹنگ منعقد ہوئی جس میں میونسپل کمیٹی بانہال کے وارڈ نمبر ایک ، تین ، چار ، پانچ اور چھ کے کونسلروں شاہدہ بانو ، ریاض احمد ، مسرت ، محمد شریف گنائی اور پرنس جہانگیر نے شرکت کی ۔ انہوں نے کہا کہ عدم اعتماد کی قرارداد پاس کرکے گزشتہ روز ایگزیکٹو افسر میونسپل کمیٹی بانہال بشیر الحسن کو پیش کی گئی ہے اور ان سے استدعا کی گئی ہے کہ وہ میونسپل کمیٹی بانہال کے صدر اور نائب صدر کی برطرفی کیلئے ایک خصوصی اجلاس طلب کریں ۔ کانگریس کی ٹکٹ پر منتخب ہوئے تمام کونسلروں نے بتایا کہ انہوں نے کہا یہ فیصلہ صدر اور نائب صدر کے ذریعہ اختیارات کے غیر منصفانہ استعمال اور مسلسل ناکامی اور من مرضی سے کام کرنے کے خلاف لیا ہے اور اس میں ممبران کی ایک تہائی اکثریت نے عدم اعتماد کی تحریک پر دستخط کئے ۔ میونسپل کمیٹی بانہال کے کونسلروں کی طرف سے عدم اعتماد کی اس تحریک کی تصدیق کرتے ہوئے میونسپل کمیٹی بانہال کے ایگزیکٹو آفیسر بشیر الحسن نے کشمیر عظمی کو بتایا کہ وہ عدم اعتماد کی اس تحریک پر ایک ہفتے کے اندر اندر میونسپل کمیٹی ایکٹ کے تحت فیصلہ کیا جائے گا اور اس سلسلے میں ضابطے کے تحت میونسپل کمیٹی بانہال کے تمام ممبران کا ایک اجلاس جلد ہی طلب کیا جائے اور اسی وقت عدم اعتماد کی تحریک کی کامیابی یا ناکامی کا فیصلہ ہوگا اور مزید کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔