ملک میں کوروناوائرس سے ہلاکتوں کی تعداد میں تشویشناک اضافہ

نئی دہلی// (یو این آئی) ہندوستان اس وقت کورونا کی تیسری لہر کا سامنا کر رہا ہے۔ اگرچہ حالات میں بتدریج بہتری آرہی ہے  تاہم  ہلاکتوں کی تعداد میں مسلسل اضافہ تشویشناک ہے۔ یہاں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران جان لیوا وبا سے 893 مریضوں کی موت ہوئی ہے جبکہ کل یہی تعداد 871 تھی۔ یہ راحت کی بات ہے کہ صحت یاب ہونے والوں کی تعداد نئے کیسز سے زیادہ ہے۔واضح رہے کہ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک میں 2 لاکھ 34 ہزار 281 نئے کیسز سامنے آئے ہیں اور اس کے ساتھ  ہی کیسز کی  مجموعی  تعداد چار کروڑ 10 لاکھ 92 ہزار 522 ہو گئی ہے۔ اس دوران 62 لاکھ 22 ہزار 682 افراد کو کووڈ ویکسین لگائی گئی ہے جس سے اتوار کی صبح 7 بجے تک ایک ارب 65 کروڑ 70 لاکھ 60 ہزار 692 افراد کو کووڈ ویکسین لگائی  جاچکی ہیں۔مرکزی وزارت صحت اور خاندانی بہبود کی طرف سے اتوار کو جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق اس وقت ملک میں کورونا کے ایکٹیو کیسز کی تعداد 18 لاکھ 84 ہزار 937 ہے جب کہ ایک روز قبل یہ تعداد 20 لاکھ چار ہزار 333 تھی یعنی گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ایکٹیو کیسز کی تعداد میں ایک لاکھ 19 ہزار 396 کی کمی  آئی ہے۔ملک میں اس وقت ایکٹیو کیسز کی شرح 4.59 فیصد ہے۔ ملک میں گزشتہ 24 گھنٹوں  کے دوران کورونا کے 3 لاکھ 52 ہزار 784 مریض صحت یاب ہونے کے ساتھ ہی صحت یابی کی شرح 94.21  ہوگئی ہے۔ ملک میں کورونا کو شکست دینے والے  مریضوں کی تعداد تین کروڑ 87 لاکھ 13 ہزار 494 تک پہنچ گئی ہے۔ اس کے ساتھ ہی اموات کی شرح 1.20 فیصد ریکارڈ کی گئی۔گزشتہ 24 گھنٹوں میں ملک میں 16 لاکھ 15 ہزار 993 کووڈ ٹسٹ کیے گئے ہیں۔ مجموعی طور پر اب تک 72 کروڑ 71 لاکھ 23 ہزار 982 کووڈ ٹسٹ کیے  جاچکے ہیں۔ملک میں ریاست کیرالہ میں  سب سے زیادہ  ایکٹیو کیسز ہیں۔ ریاست میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 2758 ایکٹیو کیسز بڑھنے کے بعد ان کی مجموعی تعداد بڑھ کر 336920 ہوگئی۔ اس کے ساتھ ہی 47649 افراد کے صحت یاب ہونے کے بعد اس سے نجات پانے والوں کی تعداد  5541834 جب کہ 94 افراد کی موت کے بعد  ہلاکتوں کی مجموعی تعداد 53191 ہو گئی ہے۔اس کے بعد دوسرے نمبر پر ریاست کرناٹک ہے، جہاں کورونا وائرس کے ایکٹیو کیسز کی تعداد 36635  سے گھٹ کر  یہ تعداد 252162 رہ گئی ہے۔ ریاست میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں 69902 مزید مریض صحتیاب ہونے سے اس  وبا کو شکست دینے والوں کی کل تعداد بڑھ کر 3465995  اور مزید 70 مزید مریضوں کی موت سے ہلاک شدگان کی  مجموعی تعداد 38874 ہو گئی ہے۔ریاست مہاراشٹر میں گزشتہ  24 گھنٹوں کے دوران  کورونا وائرس کے ایکٹیو کیسز 22232  سے گھٹ کر 248212  رہ گئے۔ اس دوران ریاست میں 50142 لوگ صحت مند ہوئے ہیں جس کے بعد اس وبا کو شکست دینے والوں کی تعداد بڑھ کر 7292791 ہوگئی۔ریاست تمل ناڈو میں اسی عرصے کے دوران کورونا وائرس کے ایکٹیو 3513  سے گھٹ کر اب یہ تعداد 208350  رہ گئی ہے اور اسی عرصے کے دوران مزید 46 مریضوں کی موت کے بعد مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 37506  اور 27885 مریضوں کے صحت یاب ہونے کے ساتھ ہی کورونا سے  شفایاب مریضوں کی تعداد بڑھ کر 3057,846 ہو گئی ہے۔ریاست مغربی بنگال میں اسی عرصے کے دوران  کورونا وائرس کے ایکٹیو کیسز کے ایکٹیو کیسز7811  سے   گھٹ کر اب یہ تعداد 37918  رہ گئی ہے اور مزید 35 مریضوں کی موت کے بعد مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 20550  جبکہ  شفایاب مریضوں کی تعداد 1931711  ہو چکی ہے۔ریاست اتر پردیش میں کورونا وائرس کے ایکٹیو کیسز 5662 سے  گھٹ  کر اب یہ تعداد 59601  رہ گئی ہے اور جان لیواوبا  سے چھٹکارا پانے والوں کی کل تعداد 1922480 جب کہ مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 23164 ہو گئی ہے۔وزیر اعظم نے کہا، ’’کچھ عرصہ پہلے مجھے علی گڑھ میں ان کے نام پر ایک یونیورسٹی کا سنگ بنیاد رکھنے کا شرف بھی حاصل ہوا۔ مجھے خوشی ہے کہ تعلیم کی روشنی کو عوام تک پہنچانے کا وہی متحرک جذبہ آج بھی ہندوستان میں جاری ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ ان عظیم انسانوں کی ترغیب ہے جس کی وجہ سے تمل ناڈو کے تریپور ضلع کے ادمل پیٹ بلاک میں رہنے والی تایمل کے پاس اپنی کوئی زمین نہیں ہے۔ برسوں سے ان کا خاندان ناریل پانی بیچ کر روزی کما رہا ہے۔ انہوں نے کمزور مالی حالت کے باوجود اپنے بیٹے اور بیٹی کو تعلیم دلانے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی تھی۔ ان کے بچے چناویرامپٹی پنچایت میں پڑھتے تھے، پھر ایک دن کلاس رومز اور اسکول کی حالت کو بہتر بنانے کی فکر ہوئی تو تایمل نے اسکول کے لیے ایک لاکھ روپے کا عطیہ دیا۔ یہ کام کرنے کے لئے بہت بڑے دل اور خدمت کاجذبہ چاہیے۔مسٹر مودی نے کہا، "تعلیم کے سلسلے میں اسی طرح کے عطیہ  کے بارے میں بھی پتہ چلا ہے کہ بی ایچ یو کے سابق طالب علم جے چودھری نے ا?ئی ا?ئی ٹی بی ایچ یو فاؤنڈیشن کے لئے تقریباً ساڑھے سات کروڑ روپے کا عطیہ دیا۔قومی راجدھانی دہلی میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں کوروناوائرس  کے ایکٹیو کیسز 4352 سے گھٹ کر  یہ تعداد 24800 رہ  گئی ہے، جب کہ 8807 مریضوں کیشفایاب ہونے کے بعد  شفایاب  مریضوں کی  مجموعی تعداد بڑھ کر 1773218 ہوگئی۔  قومی دارالحکومت  میں گزشتہ 24 گھنٹوں  کے دوران 28  مریضوں کی موت کے ساتھ ہی مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 25797 ہو گئی ہے۔ریاست آندھرا پردیش میں گزشتہ 24 گھنٹوں  کے دوران کورونا کے ایکٹیو کیسز 2125  سے بڑھ کر مجموعی  تعداد 115425 ہو گئی ہے۔ ریاست میں اس مہلک وائرس کو شکست دینے والوں کی تعداد بڑھ کر 2130162 ہو گئی ہے۔ اس دوران مزید تین مریضوں کی موت سے مرنے والوں کی تعداد 14594 ہو گئی ہے۔ریاست تلنگانہ میں  کورونا وائرس کے ایکٹیو کیسز کی تعداد 33 سے بڑھ کر 40447 ہو گئی ہے، جب کہ اسی عرصے کے دوران مزید دو مریضوں کی موت سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 4085  اور  اس کے ساتھ ہی 714034 لوگوں کو اس وبا سے نجات مل گئی ہے۔شمال مشرقی ریاست میزورم میں کورونا وائرس کے ایکٹیو کیسز کی تعداد 14811 ہو گئی ہے اور جان لیواوباکورونا سے  شفایاب  ہونے والوں کی مجموعی  تعداد 156274 جب کہ  اس ریاست میں ہلاک شدگان کی تعداد 601 پر مستحکم ہے۔راجستھان میں کورونا وائرس کے ایکٹیو کیسز 5369  سے  گھٹ کر ان کی  مجموعی تعداد  74849  رہ گئی ہے۔ اس کے ساتھ ہی کورونا سے  شفایاب ہونے والوں کی تعداد بڑھ کر 1105918 اور  ہلاک شدگان کی تعداد 9224 ہو گئی ہے۔