مسئلہ کشمیر کے حل میں تاخیر خون خرابہ کی وجہ:گیلانی

سرینگر//حریت (گ) چیئرمین سید علی گیلانی نے شوپیان معرکے میں جاں بحق ہوئے جنگجوئوں عابد احمد وگے اور شاہجہاں کو خراج عقیدت ادا کیاہے ۔انہوں نے مظاہرین پر طاقت کا بے تحاشا استعمال کرکے 20سے زائد افراد کوزخمی کرنے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ بھارت کی ضد اور ہٹ دھرمی کی وجہ سے جموں کشمیر میں انسانی خون کی ارزانی رُکنے کا نام نہیں لے رہی ہے۔ اپنے ایک بیان میںگیلانی نے کہا کہ جموں کشمیر میں جو بھی خون خرابہ ہورہا ہے اُس کی تمام تر ذمہ داری بھارت کے حکمرانوں پر عائد ہوتی ہے جو مسئلہ کشمیر کو اس کے جمہوری اور تاریخی پسِ منظر میں حل کرنے کے بجائے صرف اور صرف بندوق اور بارود سے حل کرنا چاہتا ہے۔انہوںنے کہا کہ بھارت نے جموں کشمیر کے لوگوں سے حقِ آزادی چھین لیا ہے ، جس کیلئے یہاں کے نوجوان بے مثال قربیان پیش کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ سرفروش کشمیری قوم کی محکومیت ختم کرنے کیلئے اپنی عزیز جانوں کا نذرانہ پیش کررہے ہیں اور ہم پر ذمہ داری ڈالتے ہیں کہ ان کی قربانیوں کی لاج رکھتے ہوئے حصولِ مقصد تک جدوجہد کو ہر قیمت پر اور ہر صورت میں جاری وساری رکھیں۔گیلانی نے کہا کہ الیکشن میں حصہ لینا اور ووٹ ڈالنا ان قربانیوں کے ساتھ غداری اور سودابازی ہے۔ انہوں نے کہا کہ انتخابات کا بائیکاٹ کرکے ہم بھارت کے حکمرانوں کو ایک واضح پیغام دیں کہ ہمیں کسی بھی طرح کے الیکشن ڈرامے منظور نہیں، بلکہ ہم صرف حقِ خودارادیت کا مطالبہ کرتے ہیں اور جب تک ہمارا یہ مطالبہ پورا نہیں ہوگا، ہم اپنی جدوجہد کو ہر صورت میں اور ہر قیمت پر جاری وساری رکھیں گے۔