مزید خبریں

تھنہ منڈی میں سکول پرنسپل پرحملہ ،راجوری ہسپتال منتقل

پولیس نے معاملہ درج کرکے ملزمان کی تلاش شروع کردی 

طارق شال
 
راجوری//جموں وکشمیرپولیس نے پولیس سٹیشن تھنہ منڈی میں گرلزہائرسکینڈری اسکول تھنہ منڈی پرحملہ کرنے والے افرادکے خلاف معاملہ درج کرکے ملزمان کی تلاش شروع کردی گئی ہے۔تفصیلات کے مطابق پرنسپل گورنمنٹ گرلز ہائر اسکنڈری اسکول تھنہ منڈی پر گزشتہ روزچند افراد نے حملہ کرکے انہیں شدیدزخمی کردیاہے ۔پولیس ذرائع کے مطابق پرنسپل گونمنٹ گرلز ہائر اسکنڈری اسکول تھنہ منڈی منظور احمد گنائی پرچندافرادنے اس وقت حملہ کردیاجب وہ راجوری سے واپس اپنے گھر کی طرف تھنہ منڈی آرہے تھے۔ پرنسپل ویگن آر میں سوار تھے اوران کے ہمراہ ان کی بیٹی بھی تھی،جب انکی گاڑی بمقام سوڑہ پہونچی تو چند افراد نے انکی کی ویگن آر روک کر ان پر لوہے کی راڈ سے حملہ کردیاجس کے نتیجے میں پرنسپل شدیدزخمی ہوگئے۔ پرنسپل موصوف کی بیٹی کی چیخ وپکارکے بعدچندراہ گیرموقع پرپہنچے جنہوں نے پرنسپل موصوف کو ملزمان کے چنگل سے چھڑایا۔ پولیس ذرائع کے مطابق ملزمان نے پرنسپل موصوف کی بیٹی کے ساتھ بھی ملزمان نے ہاتھا پائی کی ۔اس واقعہ کے بعدپرنسپل کوتھنہ منڈی کے شفاخانہ میں لیجایاگیاجہاں سے انہیں ضلع ہسپتال راجوری ریفرکردیاگیاجہاں پران کاعلاج چل رہاہے۔اس سلسلے میں تھنہ منڈی پولیس نے مقدمہ زیر نمبری 14/2019 زیر دفعات 307/341/323 درج کر کے ملزمان کی تلاش شروع کر دی ہے۔ اس ضمن میں ایس ایچ او تھنہ منڈی انسپکٹر جاوید احمد ملک نے بتا یا کہ پرنسپل گرلز ہائر سکنڈری اسکول تھنہ منڈی پر دوران سفر چندافرادنے حملہ کیا جن کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا ہے اورملزمان کی  تلاش کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہاکہ بہت جلدملزمان کوگرفتارکرکے ان کے خلاف کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔
 

راجوری یونیورسٹی میں ایم فِل وپی ایچ ڈی کیلئے داخلہ ٹیسٹ منعقد

راجوری//باباغلام شاہ بادشاہ یونیورسٹی میں 16 شعبوں میں ایم ۔فِل اورپی ایچ ڈی میں داخلے کیلئے انٹرنس کاانعقادکیاگیاجس کیلئے 700سے زائد اُمیدواروں نے اپنے فارم داخل کروائے تھے۔وائس چانسلر باباغلام شاہ بادشاہ یونیورسٹی پروفیسرجاویدمسرت نے امتحانی مراکزکادورہ کرکے اُمیدواروں کیلئے دستیاب سہولیات کاجائزہ لیا۔اس موقعہ پر پروفیسرجاویدمسرت نے کہاکہ یونیورسٹی ریسرچ اسکالروں کوعالمی اورہندوستانی تعلیمی اداروں کی طرز پر بہترتحقیقی سہولیات فراہم کرنے کی وعدہ بندہے۔اس دوران ڈین اکیڈمک افیئرس ،پروفیسراقبال پرویز ،رجسٹرارڈاکٹراشفاق احمد زری ،پروفیسرجی ایم ملک، ڈین آف سٹوڈنٹس اوریونیورسٹی کے دیگرعہدیداران بھی وائس چانسلرکے ہمراہ تھے۔
 

اسمبلی انتخابات کے انعقادکامطالبہ 

مینڈھر//مینڈھرکے لوگوں میں اسمبلی انتخابات کی تاخیرپرتشویش ظاہرکرتے ہوئے جلداسمبلی انتخابات کے انعقادکامطالبہ کیاہے۔اس سلسلے میں سماجی کارکن عبدالحکیم نے کہاکہ اس وقت جب ریا ست جموں و کشمیرمیں صدر راج نا فذہے او ر ریا ست جموں وکشمیر کی خصوصی شناخت و تہذیب خطرے میں ہے اس لیے عوام کی حکومت کے قیام کیلئے جلدازجلد اسمبلی انتخابات عمل میں لائے جانے چاہئیں۔انہوں نے کہاکہ صدرراج عوامی حکومت کامتبادل نہیں ہوسکتاہے اورزیادہ دیرتک صدرراج کانفاذبرقراررہنامسائل پیداکرنے کاموجب بن سکتاہے۔عبدالحکیم نے کہاکہ ریاست کی مخصوص شناخت پرکسی بھی قسم کے حملے سے بچائوکیلئے اقدامات اٹھائے جانے ضرور ی ہیں۔انہوں نے کہاکہ جموں وکشمیر میں جمہوری حکومت کاقیام وقت کاتقاضاہے ۔انہوں نے الیکشن کمیشن آف انڈیاسے اپیل کی کہ جموں وکشمیرمیں جمہوریت کے استحکام کیلئے بلاتاخیراسمبلی انتخابات کاانعقادکیاجائے۔