مدرسہ خدیجتہ الکبریٰ ا لبنات کا سالانہ جلسہ | 13 طالبات کی ردا پوشی، علماء نے مدارس کی اہمیت و سیرت طیبہ پر روشنی ڈالی

ڈوڈہ //مدرس خدیجتہ الکبریٰ البنات پولئی بھلیسہ کے سالانہ جلسہ ختم درس بخاری کے سلسلہ میں ایک پروقار تقریب کا انعقاد کیا گیا جس دوران 13 طالبات کی عالمیت سے فراغت کے بعد ردا پوشی کی گئی۔ پہلی نشست مفتی محمد ساجد و دوسری نشست الحاج برہان القادر مہمتم غنیتہ العلوم کی صدارت میں اپنے اختتام کو پہنچی۔تقریب کا آغاز تلاوت قرآن پاک و نعتیہ کلام سے کیا گیا اس کے بعد مکتب ہذا کے ننھے منے بچوں نے قرآن و احادیث کی روشنی میں اپنا رنگا رنگ پروگرام پیش کیا۔سالانہ جلسہ کی تقریب میں ختم بخاری کا درس مفتی شبیر احمد قاسمی صدر مدرس غنیتہ العلوم نے دیا جبکہ مفتی بشیر احمد لون، مفتی بشارت احمد،حافظ محمد اسحاق، مفتی خیر الدین، مفتی محمد آصف و مدرسہ ہذا کے مہتمم مفتی مشتاق احمدکے علاوہ کئی مقررین نے خطاب کیا۔علماء کرام نے کہا کہ دین اسلام میں مردوں کی تعلیم کے ساتھ ساتھ تعلیم نسواں پر آج سے چودہ سو سال پہلے زور دیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مرد کی تعلیم ایک فرد جبکہ عورت کی تعلیم ایک خاندان کو روشن کرتی ہے۔انہوں نے مدرسہ ہذا سے عالمیت کی سند حاصل کرنے والی طالبات کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ یہ ان کے اساتذہ و والدین کے لئے بھی باعث فخر و سعادت مندی ہے۔علماء نے امت مسلمہ پر زور دیا کہ وہ اللہ تعالیٰ کے بتائے ہوئے احکامات، حضور اکرم کے اپنائے ہوئے طریقوں و قرآنی تعلیمات کے مطابق اپنی عملی زندگی گذار کر دنیا و آخرت کی کامیابی و کامرانی حاصل کریں۔ انہوں نے مدارس اسلامیہ کی اہمیت بیان کرتے ہوئے کہا کہ اولیاء اللہ، دین کے مبلغ و امن کے علمبردار انہیں اداروں کی پیداوار ہیں۔انہوں نے عوام الناس سے ان اداروں کی مالی معاونت کرنے کی اپیل کی۔تقریب کے آخر پر الحاج برہان القادر غنی پوری نے دیگر علماء کی موجودگی میں تیرہ طالبات کی ردا پوشی کرکے پورے عالم میں امن، سلامتی، خوشحالی و کورونا جیسی مہلک وباء سے نجات دینے کی دعاکی۔اس دوران الحاج فیروز الدین بٹ، سابق سرپنچ الطاف حسین ملک نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیاجبکہ نظامت کے فرائض قاری محمد عمران لون نے انجام دیئے۔